ورلڈ ٹی 20 کا سال،تیاریاں شروع،کون چیمپئن بنا،کس کا غلبہ رہا،کون ہاتھ ملتا رہا

عمران عثمانی
Image By youtube

آئی سی سی کا سب سے مختصر مگر منافع بخش ایونٹ ورلڈ ٹی 20 کپ اس سال بھارت میں ہورہا ہے جس میں دنیائے کرکٹ کی نامور ٹیمو ں سمیت کوالیفائرز بھی شریک ہونگی،ا س کے حوالہ سے مکمل تفصیلات کرک سین جلد پیش کرے گا۔
ورلڈ ٹی 20کے حوالہ سے یہاں مختصر ترین جائزہ پیش خدمت ہے کہ ایونٹ کب شروع ہوا،کون کون چیمپئن بنا اور کس کے لئے یہ فارمیٹ اب تک ڈرائونا خواب ہی ثابت ہوا ہے کہ وہ جیت ہی نہ سکے۔
انٹر نیشنل کرکٹ کونسل کے زیر اہتمام اب تک 6مرتبہ یہ ایونٹ ہوچکا ہے۔2007سکے پہلے ایڈیشن سے 2016کے آخری کپ تک ویسٹ انڈیز ٹیم 2بار چیمپئن بننے والی واحد ٹیم ہے۔
2007 کا پہلا ورلڈ ٹی 20 جنوبی افریقا میں کھیلا گیا۔جوہانسبرگ کے فائنل میں بھارت نے روایتی حریف پاکستان کو 5رنز سے ہرا کر چیمپئن بنے کا اعزاز حاصل کرلیا۔
2009کے دوسرے ایڈیشن میں پاکستان چیمپئن بن گیا،اس نےاوول لندن میں سری لنکا کو فیصلہ کن معرکہ میں8وکٹ سے شکست دی۔
2010کے تیسرے ایڈیشن کا چیمپئن انگلینڈ تھا،اس نے برج ٹائون کے فائنل میں آسٹریلیا کو 7وکٹ سے مات دے دی۔
2012میں سری لنکا میزبان تھا،کولمبو میں وہ ویسٹ انڈیز سے آخری و فیصلہ کن میچ میں 36رنزسے مات دے کر ٹائٹل اپنے نام کرلیا۔
2014میں ڈھاکا میں کھیلے گئے فائنل میں سری لنکا چیمئن بن ہی گیا،اس نے بھارت کو 6وکٹ سے مات دے کر پہلی بار ٹرافی اپنے نام کرلی۔
2016کے اب تک کے آخری ایونٹ کا میزبان بھارت تھا،کولکتہ میں ویسٹ انڈیز نے انگلینڈ کو ناقابل یقین انداز میں 4وکٹ سے ہرا کر دوسری بار ٹرافی اٹھانے کا اعزاز حاصل کیا۔
جنوبی افریقا بی ٹیم کی بھی سخت ٹکر،پاکستان سنسنی خیز مقابلے کے بعد کامیاب
اس ایونٹ کے بعد فیصلہ کیا گیا تھاکہ ورلڈ ٹی 20 ہر 4سال بعد ہوگا،تو 2020کا ایڈیشن کورونا کی وجہ سے نہ ہوسکا۔یہ آسٹریلیا میں ہونا تھا جو اب 2022میں آسٹریلیا میں ہوگا جبکہ 2021 کا ایونٹ بھارت میں ہورہا ہے۔اس اوپر تلے ایڈیشن کی وجہ یہ ہے کہ 2017کی چیمپئنز ٹرافی کے بعد آئی سی سی نے اسے ختم کرنے کا مستقل فیصلہ کیا اور2020سے ایک بار پھر ہر 2سال بعدایونٹ کی منظوری دے دی۔
اتفاق سے ورلڈ ٹی 20اب 4 سال بعد نہیں بلکہ 5 سال بعد کھیلا جائے گا لیکن اس کی کسر ایک سال میں اس وقت پوری ہوجائے گی جب اگلے سال آسٹریلیا اس کی میزبانی کرے گا.بھارت دوسری بار ورلڈ ٹی 20 کی میزبانی کرے گا اور مسلسل دوسری بار وہاں ایونٹ کھیلا جائے گا.ورلڈ ٹی 20 کی تاریخ دیکھی جائے تو ایشیائی ٹیموں کا غلبہ رہا ہے.پاکستان،بھارت اور سری لنکا چیمپئن بن چکے ہیں جبکہ اس کے بعد ویسٹ انڈیز نے 2 بار اور انگلینڈ نے ایک بار ایونٹ جیتا ہے.آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ اسی طرح جنوبی افریقا اب تک ناکام رہے ہیں.
2021 ورلڈ ٹی 20 کا سال ہے،دنیائے کرکٹ میں اس سال ٹی20 انٹر نیشنل میچز ہوتے دکھائی دیں گے لیکن اہم بات یہ بھی ہے کہ بھارتی کرکٹ ٹیم میزبان ہونے کے ناطے فیورٹ ہوگی ،ایشیائی وکٹوں پر آسٹریلیا وغیرہ کومشکلات ہی پیش رہی ہیں.کرک سین ورلڈ ٹی 20 کے حوالہ سے گاہے بگاہے اہم ترین مگر منفرد آرٹیکل شائع کرے گا،اسی سلسلے کا یہ پہلا مضمون آج پیش خد مت ہے.
آنے والے دنوں میں ورلڈ ٹی 20 کے ہر ایڈیشن کا مکمل جائزہ،ایونٹ کے ریکارڈز،واقعات،نمایاں پرفارمرز کا ذکر ہوگا اور ساتھ ہی ورلڈ ٹی 20 کے 2021 ایڈیشن کا مکمل شیڈول،ٹیموں کا تعارف اور ان کی متوقع کارکردگی پر بھی قلم اٹھایا جائے گا.

اپنا تبصرہ بھیجیں