کونسا غیر ملکی کھلاڑی پی ایس ایل ملتوی ہونے پر دکھی،پاکستان کے بارے میں کیا کہا

کراچی (کرک سین رپورٹ)
Image By Twitter
پاکستان سپر لیگ 6 کے التوا سے جہاں ملکی کھلاڑی افسردہ ہیں،وہاں غیر ملکی کھلاڑی بھی خوش نہیں ہیں.ویسٹ انڈیز سے تعلق رکھنے والے آل رائونڈر شرفین ردر فرڈ نے نہایت دکھ کے ساتھ کہا ہے کہ پی ایس ایل 6کے التوا پر افسوس ہوا،نہایت دلچسپ مقابلے جاری تھے.میں پاکستان میں کھیل کر محظوظ ہورہا تھا لیکن التوا کے فیصلے کا احترام کرتے ہیں.میرے لئے پی ایس ایل کو نا مکمل چھوڑ کرجانا آسان امر نہیں ہے.بدقسمتی سے صورتحال ہی ایسی ہوگئی ہے کہ اس کے علاوہ کوئی چارہ کار ہی نہیں تھا.
کورونا نے30 اوورز بعد میچ لپیٹ دیا،آسٹریلیا فاتح،سیریز برابر،انگلش ٹیم کا جوابی وار
انہوں نے مزید کہا ہے کہ گڈ بائی پاکستان،میں یہاں سے یادگار لمحات لئے واپس جارہا ہوں اور اپنی ٹیم پشاور زلمی کے لئے پاکستان واپس آئوں گا اور لیگ میں شرکت کرکے اسے چیمپئن بنوانے میں اہم کردار ادا کروں گا.
دوسری جانب جنوبی افریقا سے تعلق رکھنے والے پیسر ڈیل اسٹین نے بھی لیگ ختم کئے جانے کو مایس کن قرار دیا ہے اور اپنےویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ شائقین کے لئے اگر یہ مایوس کن لمحات ہیں توہمارے لئے بھی یہی صورتحال ہے لیکن کووڈ پر کسی کا کنٹرول نہیں ہے،اس لئے اچھی امید کے ساتھ جارہے ہیں کہ جلد ہی اپنا نامکمل مشن مکمل کرلیں گے،پاکستان میں کرکٹ کھیلنے کا بھر پور لطف اٹھایا،میں آئندہ بھی یہاں آئوں گا،سکیورٹی صورتحا ل تسلی بخش ہے.اسٹین کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی نمائندگی کے لئے لیگ کے آغاز کے تیسرے روز پاکستان پہنچے تھے.
پاکستان سپر لیگ کے حوالہ سے غیر ملکی پلیئرز کے جذبات قریب ایک جیسے ہیں لیکن کسی نے بھی بائیو سیکیور ببل کے حوالہ سے کوئی اعتراض نہیں اٹھایا ہے کیونکہ پلیئرز بھی شاید زیادہ سختی پسند نہیں کرتے ہیں،انٹرنیشنل پلیئرز کی دستیاب فلائٹس کے ساتھ پاکستان واپسی کا سفر شروع ہوچکا ہے،پی ایس ایل التو ا پر پی سی بی کی جانب سے جمعہ کو تفصیلی رد عمل جاری ہونے کا امکان ہے.