پاکستان ٹیم سلیکشن پر انضمام کی سمجھ جواب دے گئی،ویژن سے عاری قرار، سنسنی خیز پیش گوئی

عمران عثمانی
Image By espncricinfo
پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان و سابق چیف سلیکٹر انضمام الحق قومی سلیکشن کمیٹی پر بری طرح برس پڑے. ویژن سے عاری دماغ قرار دیتے ہوئے ٹیم کی ناکامی و نامرادی کی پیش گوئی کردی ہے. انضمام الحق نے نئے چیف سلیکٹر محمد وسیم کی جنوبی افریقہ کے خلاف اعلان کردہ قومی ٹیسٹ ٹین کو نکمی قرار دے دیا.اپنے یوٹیوب چینل پر انضمام نے کہا ہے کہ ایسا لگتا ہے کہ یہ سلیکشن کسی کو خوش کرنے کے لئے کی گئی ہے کہ جیسے ایک سیریز ہی مستقبل ہو. انضمام نے تابش خان کی سلیکشن پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ 36 سے 37 کے فاسٹ بائولر کو شامل کرلیں گیا ایسی عمر کا تو بیٹسمین نہیں کھلایا جاتا.
کیا یہ پرفارمنس کی بنیاد پر سلیکشن کی گئی؟
حارث رئوف کے 4 روزہ میچ مشکل سے 3 ہیں اور وکٹیں صرف 7 ہیں تو وہ کس بنیاد پر سلیکٹ کئے گئے؟
حارث رئوف کو فرسٹ کلاس میچ کهلائے بغیر ہی سیدھا ٹیسٹ میچ کھلانا ہے؟ عبد اللہ شفیق کو ٹیسٹ اسکوارڈ میں جگہ دے دی. اس نے صرف ایک فرسٹ کلاس میچ کھیل رکھا ہے.
انضمام نے نہایت ہی سخت اور غصے میں سوال کیا کہ کیا پاکستان کرکٹ ٹیم کی سلیکشن کا معیار یہ ہوگیا ہے کہ آپ 1 یا 3 میچ کھیلنے والے یا 37 سال کے بابے کو سلیکٹ کریں گے؟
انضمام کہتے ہیں کہ میری عقل اور سمجھ جواب دے گئی ہے کہ یہ کیا کچھ سلیکٹ ہوا.
آپ نے شان مسعود کو ڈراپ کیا کہ وہ ناکام ہے تو عابد علی کو کیوں سلیکٹ کیا.وہ بھی انگلینڈ ٹور سے مسلسل ناکام ہے. کیا پیمانہ ہے اس سلیکشن کا؟
اگر 10 اننگز میں ناکام رہنے والے بھی اب سلیکٹ ہوسکتے تو پھر کہوں گا کہ میری سمجھ سے باہر ہے. جہاں آپ نے ڈومیسٹک کرکٹ کے ٹاپ پرفارمرز میں سے 2 لئے وہاں 2 اور لے لیتے مگر یہ انداز و اطوار میری سمجھ سے باہر ہے.
چیف سلیکٹر لوگوں کو خوش کرنے میں لگا ہے کہ میرے اوپر تنقید نہ ہو. جتنا انسان بچنے کی کوشش کرے گا اتنا پهنستا جائے گا.
یہ کیا سلیکشن ہے. لگتا ہے کہ بورڈ والے بھی آنکھیں بند کر کے بیٹھے ہیں. ان کو بھی سمجھ نہیں آرہی. درمیان میں خبریں چلیں کہ کوچے سے ٹیم سلیکشن کا اختیار واپس لے لیا گیا ہے. بابر اعظم کی سوچ چلے گی.یہ سوچ ہے تو اس پر پھر واقعی سوچنے کی ضرورت ہے. عباس 20 میں بھی نہیں. سہیل بغیر کھلائے باہر ہے تو ایسی سلیکشن پر کیا کہوں.
مجھے اس سلیکشن مین ویژن دکھائی نہ دیا. یہ ناکامی والی ٹیم ہے. مجھے ان 20 لڑکوں سے پاکستان کی جیت دکھائی نہیں دے رہی. پھر بھی کامیابی کے لئے دعا گو ہوں.
انضمام نے اپنی گفتگو میں 6 بار کہا کہ میری سمجھ سے باہر ہے اور نہایت مایوسی کے عالم میں بات ختم کی ہے.
جمعہ کو پاکستان کی 20 رکنی ٹیسٹ تیم جو سامنے ائی ہے اس سے کرکٹ حلقوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے.چیف سلیکٹر محمد وسیم نے کراچی سے ٹیم کا اعلان کیا ہے.پہلا ٹیسٹ 26 جنوری سے شروع ہوگا.

اپنا تبصرہ بھیجیں