پی ایس ایل 6میں آج ہاری ہوئیں ٹیمیں مدمقابل،ٹاس نفسیاتی مسئلہ بن گیا

عمران عثمانی
Image By arynews
پاکستان سپر لیگ میں آج منگل کو ایک اور اہم میچ کھیلا جارہا ہے،اب تک کی2 ناکام ٹیمیں آپس میں ٹکرائیں گی،نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں ملتان سلطانز اور پشاورزلمی کے مابین کانٹے دار میچ کھیلا جائے گا،دونوں ٹیمیں اپنے اولین میچز میں ہار گئی تھیں۔ملتان سلطانز کو اسلام آباد یونائیٹڈنے جبکہ پشاور زلمی کو لاہور قلندرز نے شکست دی تھی،سوال یہ ہے کہ آج کامیچ کون جیتے گا،جو جیتے گا وہ فتح کے ٹریک پر سوار ہوگا جبکہ ہارنے والی ٹیم کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے ساتھ مل جائے گی جو دونوں میچز ہارچکی ہے۔
پشاور زلمی ٹیم اپنے تجربہ کار کھلاڑی محمد حفیظ سے بھی اسی پرفارمنس کی توقع کرتی ہے جیسی کارکردگی ان کے ہم عمر محمد حفیظ نے ایک روز قبل پیش کی تھی۔وہاب ویاض کے مقابلے میںمحمد رضوان کپتانی کریں گے۔
پی ایس ایل میں محمد حفیظ کی بیک وقت ڈبل ففٹی،کرس گیل سےدلچسپ مکالمہ
دونوں کے پہلے میچز کا جائزہ لیا جائے تو صاف لگتا ہے کہ ملتان نے پشاور سے بہتر کرکٹ کھیلی تھی کیونکہ ملتان کی بائولنگ لائن نے اسلام آباد کو آخری لمحات تک گھیرے میں رکھا تھا جبکہ زلمی کو قلندز نے آسانی سے شکست دے تھی۔
آج کے میچ میں دونوں ٹیموں میں ایک ایک تبدیلی کا امکان ہے،عمران طاہر کی سلطانز اسکوڈ میں واپسی ہوگی جبکہ زلمی اپنی بیٹنگ لائن میں ایک اچھے آل رائونڈر کو شامل کرنے پر غور کر رہی ہے۔دونوں ٹیموں کے آخری 5میچز کا جائزہ لیا جائےتو سلطانز کو 2-3 سے سبقت حاصل ہے،گزشتہ سیزن کے دونوں میچز ملتان کے نام رہے تھے اور پشاور کو ملتان کے خلاف کوئی بھی سنگل میچ جیتے2 سال ہوگئے ہیں،اس نے 28فروری 2019کو میچ جیتا تھا۔ملتان سلطانز کا اوور آل ریکارڈ پشاور زلمی کے خلاف قدرے بہتر ہے،اب تک کھیلے گئے6میچز میں سے اسے 2-4سے برتری ہے تو سلطانز کا ریکارڈ خاصا بہتر ہے اور موجودہ پلیئرز میں بھی اس کو حریف ٹیم پر اچھی برتری حاصل ہے۔
پی ایس ایل 6 میں جاری ایک اہم روایت کا ذکرضروری ہے،کرک سین اس پر گزشتہ میچ سے قبل بھی سوال اٹھا چکا ہے کہ پہلے بیٹنگ والی ٹیم مسلسل ہار رہی ہے،اب تک کے تمام میچز میں یہی کچھ ہوا،حتیٰ کہ آخری میچ میں کوئٹہ ٹیم178 اسکور کر کے بھی ہارگئی۔اس سے قبل کے میچ میں ملتان نے اسلام آباد کے 6کھلاڑی76پر آئوٹ کردیئے تھے اورآدھا اسکور باقی تھا کہ ٹیم نہیں جیت سکی کیونکہ بعد میں فیلڈنگ کر رہی تھی تو پی ایس ایل 2021 کی یہ روایت جاری رہے گی؟

اپنا تبصرہ بھیجیں