جوہانسبرگ میں قومی کرکٹ ٹیم کی بے وقوفی،بابر اعظم کی نااہلی،سیریز برابر

رپورٹ : عمران عثمانی

جنوبی افریقا نے پاکستان کرکٹ ٹیم کا عرس پڑھ دیا،بیٹنگ لائن کو فنا کرنے کے بعد بائولنگ لائن کے پرخچے اڑادیئے اور بظاہر کمزور حریف نے بڑی بلند دکھائی دینے والی ٹیم کے پائوں سے زمین کھینچ دی.141 رنزکا ہدف 14اوورز میں مکمل کرکے بڑا پیگام جاری کردیا کہ 36 بالز قبل میچ کیسے جیتا جاتا ہے.پاکستان کے 140 کے جواب میں جنوبی افریقا نے ہدف 4وکٹ پر پورا کرلیا.

ایسا لگا کہ جیسے پاکستانی ٹیم کو آج خود سے خود کشی کا شوق چرا گیا .ٹیم میں تبدیلیاں ،ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ اور بیٹسمینوں کی بد حواسی کے بعد اتنا کم اسکور جیت کی بنیاد بن نہیں سکتا تھا. بابر اعظم پاکستان کے کپتان ہیں. میچ فنش کرنا سیکھ سکے اور نہ ہی بھنور میں پھنسی کشتی کو نکالنے کا طریقہ جان سکے.ایسا پہلی بار نہیں ہوا کہ ٹیم کی ایسی تیسی پھری ہو اور وہ محض اپنی دکھاوے کی اننگ کے سوا کچھ کرسکے ہوں. آج 50 بالز پر 50 کا مطلب 100 کا اسٹرائیک ریٹ بنے.

جنوبی افریقا نے 141 کا ہدف بہت جارحیت کے ساتھ پورا کیا. 2 بار اوپر تلے 2،2 وکٹیں گرنے کے باوجود اس نے 14ویں اوور کی آخری بال پر اسکور پورا کرلیا.ایڈن مارکرم 30بالز پر 54کے ساتھ ٹاپ اسکورر رہے.ہنریک کلاسین نے 21 بالز پر 36 کئے ،جانی میلان 15 رنزبناسکے.پاکستان کی جانب سے شاہین نے 3 اوورز میں 30رنزکھائے،ناکام گئے.محمد حسنین 2 اوورز میں 25رنز دے کر ایک وکٹ لے سکے،حسن علی نے 16رنز دے کر ایک اور عثمان قادر نے 3 اوورز میں 26رنز دے کر 2کھللاڑی آئوٹ کئے.

پاکستانی بیٹنگ لائن کا عرس،بابر کی سست ترین اننگز،پروٹیز کو معمولی سا ہدف

اس سے قبل قومی ٹیم مقررہ اوورز میں 9وکٹ پر 140کرسکی،بابر نے 50 بالز پر 50کئے،رضوان صفر پر گئے.شرجیل 8کرسکے،حفیظ نے 23بالز پر 32کئے.حیدر علی اور حسن علی 12 اور 12پر گئے جبکہ 5 اور محمد نواز 2کرسکے،مین آف دی میچ جارج لنڈے نے کیریئر بیسٹ 23رنز کے عوض 3وکٹ لئے.لزاد ولیمز نے 35رنز کے عوض 3کھلاڑی آئوٹ کئے.

پاکستان پروٹیز کے خلاف مسلسل 3میچزجیتنے کا اعزاز حاسل نہ کرسکی اور ایک بار پھر باہمی مقابلوں میں خسارے میں چلی گئی ہے،میزبان ٹیم کے 5کھلاڑی نہ ہونے کے باوجود فتح اہم رہی.

پاکستانی ٹیم نے 2 تبدیلیاں کیں،فخر کی جگہ شرجیل اور حارث کی جگہ حسنین کھیلے.4میچزکی سیریز 1-1سے برابر ہوگئی ہے.کرک سین کا ماننا ہے کہ پاکستان کی ناکا می کی بنیادی وجہ غلط فیصلہ ،جلد بازی اور ٹیم میں غلط تبدیلی تھی کیونکہ پروٹیز نے پہلے میچ کی ٹیم کھلا کر پاکستان کے خلاف کامیابی حاصل کرلی جس کی توقع ہی کم افراد کو تھی.