پی سی بی چیف ایگزیکٹو وسیم خان کے مستقبل کا فیصلہ ہوگیا،بگ بریکنگ نیوزکرک سین پر

عمران عثمانی

پاکستان کرکٹ کے ایوانوں سے کنفرم بڑی خبر یہ ہے کہ چیف ایگزیکٹو پی سی بی وسیم خان کے بارے میں اہم فیصلہ ہوگیا ہے،رسمی اعلان جلد متوقع ہے۔وسیم خان پاکستان کرکٹ بورڈ میں چیف ایگزیکٹو کے عہدے پر گزشتہ 2 سال سے کام کر رہے ہیں،انگلینڈ سے پاکستان لائے جانے والے وسیم خان کی مدت ملازمت ایک سال بعد فروری میں ختم ہونے جارہی ہے لیکن پاکستان کرکٹ بورڈ نے ان کے اگلے دور کے معاملات بھی سیٹ کر لئے ہیں۔
کرک سین ذرائع کے مطابق چیف ایگزیکٹو پی سی بی وسیم خان کو 2022 سے 2025 تک مزید 3 سالہ معاہدے کی پیشکش کی جائے گی جو وہ قبول کرلیں گے کیونکہ پی سی بی اور ان میں ان معاملات پر حتمی مشاورت مکمل ہوگئی ہے۔پاکستان کرکٹ بورڈ وسیم خان کو کیوں مزید 3 سال دینے جارہا ہے جبکہ چیئرمین پی سی بی کے3 سالہ مدت زمانہ کے مکمل ہونے میں اب صرف 6 ماہ باقی بچے ہیں،ان کے حوالہ سے فیصلہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے کرنا ہے جو کرکٹ بورڈ کے پیٹرن انچیف بھی ہیں۔
کرک سین ذرائع کے مطابق وسیم خان نے پاکستان کرکٹ کے لئے بے شمار خدمات پیش کی ہیں،ان میں سر فہرست غیر ملکی ٹیموں کو پاکستان آنے پر آمادہ کرنا ہے۔وسیم خان نے اب تک جنوبی افریقا ،بنگلہ دیش،ویسٹ انڈیز اور سری لنکا کے پاکستان کے دورے کروادیئے ہیں جبکہ انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کو آمادہ کروالیا ہے جو اس سال ٹی 20 سیریز کے لئے ستمبر و اکتوبر میں پاکستان آئیں گے،پھر اہم ترین ٹاسک آسٹریلیا کا اگلے سال کا دورہ پاکستان ہے،اس کے لئے وسیم خان کی اگلی تقرری نہایت ہی ضروری ہے اور اس حوالہ سے وسیم خان آسٹریلیا کرکٹ حکام کے ساتھ بہت آگے جاچکے ہیں۔
پاکستان کرکٹ بورڈ کے حکام سمجھتے ہیں کہ وسیم خان کی اگلی تقرری ابھی سے کی جائےگی تو وہ بہتر انداز میں کام کریں گے،پھر ملکی ڈومیسٹک کرکٹ کی بہتری کے لئے پی سی بی نے جو اقدامات اٹھائے ہیں،ان میں سے بہت سے کام ابھی ابتدائی مراحل میں ہیں اس لئے بھی وسیم خان کا ہونا ضروری ہے۔
پی سی بی سی او کے اوپر پاکستانی میڈیا کے ایک خاص حلقے کی حد سے زیادہ تنقید رہی ہے،وہ تنقید ایک حد تک درست بھی ہوسکتی ہے لیکن 100 فیصد درست نہیں رہی۔کرک سین کو پی سی بی ذرائع سے ملنے والی تفصیلات سے علم ہوا ہے کہ پی سی بی حکام جس جانفشانی سے کام کررہےہیں،اس کی زیادہ جھلک واضح نہیں ہوتی ہے ،جہاں تک کمزوریوں،ناکامیوں اوربہت حد تک غلطیوں کا تعلق ہےتو ا س میں وہی گروپ زیادہ فعال اور کاری وار کرتا ہے جن کے مفادات کو کہیں نہ کہیں ضرب لگتی ہے۔وسیم خان پاکستانی میڈیا سے شاکی بھی رہے ہیں لیکن اب وہ مسلسل کام کرنے کے لئے تیار ہیں۔
وسیم خان کے اگلے دور ملازمت میں 2022سے 2025 تک پاکستان میں متعدد غیر ملکی ٹیموں نے آنا ہے اور پی سی بی ایک بڑے ایونٹ کی میزبانی کی خواہش بھی رکھتا ہے۔
قومی میڈیا میں وسیم خان کی اگلے دور کے حوالے سے کنفرم خبر کہیں بھی نہیں دیکھی گئی.کرک سین یہ خبرنہایت ہی باوثوق ذرائع سے دے رہا ہے کہ وسیم خان پاکستان کے طویل الوقتی چیف ایگزیکٹو پی سی بی بننے جارہے ہیں.