پی ایس ایل 6 کو پہلا بڑا دھچکا،غیر ملکی پلیئرکا کھیلنے سے انکار

وہی ہوا ،جس کا اظہار کرک سین اس روز سے کر رہا ہے جس روز آئی پی ایل ملتوی کی گئی تھی،پاکستان سپر لیگ کو پہلے غیر ملکی کھلاڑی نے جھٹکا دے دیا اور جون میں شیڈول ایونٹ کے باقی میچزمیں کھیلنے سے انکار کردیا ہے.پی ایس ایل فرنچائز لاہور قلندرز کو پہلا انکار دیکھنا پڑا ہے،جب بنگلہ دیشی کرکٹر تمیم اقبال نے جون میں شیڈول باقی ایونٹ میں کھیلنے سے انکار کردیا ہے.

شکیب الحسن کو لاہور قلندرز نے متخب کیا تھا، بنگلہ دیشی آل رائونڈر نے اب اعلان کیا ہے کہ وہ پی ایس ایل میں شرکت نہیں کریں گے بلکہ وہ اپنے ملک میں ہونے والی ڈھاکا پریمیئر لیگ کو ترجیح دیں گے جو 31 مئی سے شیڈول ہے،گویا انہوں نے اپنی ملکی معمولی لیگ کو جو کہ مکمل طور پر ڈومیسٹک لیگ ہے ،اس کو پی ایس ایل پر اہمیت دے دی ہے.اس طرح پی ایس ایل 6میں کسی بھی پہلے غیر ملکی پلیئر نے کھیلنے سے انکار کردیا ہے.بنگلہ دیش کے 2 اور کرکٹرز محمود اللہ ملتان سلطانز اور لٹن داس کراچی کنگز کے لئے منتخب ہوئے ہیں،ان کی جانب سے فی الحال پی ایس نہ کھیلنے کی کوئی بات نہیں ہوئی ہے.

کرک سین نے پہلے دن سے کہا تھا کہ آئی پی ایل التو ا کے بعد کراچی میں پی ایس ایل کا انعقاد ناممکن ہوگیا ہے،یہ خبر بعد میں سچ ثابت ہوئی تھی،پھر کرک سین نے کہا تھا کہ لیگ کے جون میں عرب امارات میں ہونے کے امکانات خاصے کم ہیں اور اگر کسی نہ کسی طرح یہ لیگ جون میں ہوبھی گئی تو غیر ملکی پلیئرز کو پہلے کی طرح اس میں شرکت کرنا ناممکن ہوجائے گا،یہ تجزیہ بھی اب آہستہ آہستہ سچ ثابت ہورہا ہے.

پی سی بی عرب امارات کے ساتھ مل کر کسی فیصلہ کن موڑ کے قریب پہنچ گیا ہے،بس اعلان باقی ہے.