پی ایس ایل 6کا بڑا ٹاکراآج،تمام ٹاس کے محتاج،اب تک سب ناکام،اصل امتحان کیا

عمران عثمانی
Image By youtube
پاکستان سپر لیگ 6میں آج ابتدائی رائونڈ کا سب سے بڑا اور روایتی ٹیموں کا سنسنی خیز مقابلہ ہورہا ہے،نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں گزشتہ سال کی فائنلسٹ ٹیمیں آمنے سامنے ہونگی۔ایک طرف دفاعی چیمپئن کراچی کنگز ہے اور دوسری جانب لاہور قلندرز،دونوں نے اس بار روایت سے ہٹ کر بہتر انداز میں اٹھان پکڑی ہے۔اتفاق سے پوائنٹس ٹیبل پر دونوں کا نمبر قریب یکساں ہے،3،3میچز میں 4،4پوائنٹس ہیں،نیٹ رن ریٹ پر کراچی کنگز کو سبقت حاصل ہے لیکن آج کے میچ کے بعد ایک ٹیم 6پوائنٹس لے کر پشاور زلمی سے آگے نکل جائے گی اور یا پھر اس کی طرح 6پوائنٹس کے ساتھ ٹاپ 2ٹیموں میں ہوگی۔دونوں ٹیمیں روایتی حریف ہیں اور دونوں میں ٹکر کا جوڑ پڑتا ہے اور شائقین اس مقابلے سے بھر پور لطف اٹھاتے ہیں۔
رواں سیزن میںدونوں نے 2،2 میچز جیتے ہیں اور ایک ایک میچ میں ناکام ہوئے ہیں۔یہ پی ایس ایل 6کا 11واں میچ ہے،اب اس لیگ کی ایک منفی بات جو بہت زیادہ تقویت پکڑ چکی ہے ،اس سے میچز کی دلچسپی کو دھچکا لگا ہے اور وہ بات یہ ہے کہ ٹاس جیتنے والی ٹیم 99 فیصد میچ جیت جاتی ہے اور جب وہ حسب توقع اگلی ٹیم کو پہلے بیٹنگ کرواتی ہے تو 100 فیصد فتح اس کی پاکٹ میں ہوتی ہے کیونکہ 10 میچز میں ہدف کا تعاقب کرنے والی ٹیموں نے ہر حال میں کامیابی اپنے نام کی ہے،چاہے اس کے لئے اسے بعد میں 200 اسکور ہی کیوں نہ کرنا پڑے،جمعہ کی شب پشاور نے کوئٹہ کے خلاف 198 کے جواب میں 202کرکے ہی فتح سمیٹی تھی۔
پی ایس ایل 6،اسلام آباد کو پہلی مار،حسن اور حیدر کی تکرار،زلمی پوائنٹس ٹیبل کی شہنشاہ
کیا یہ اچھی بات ہے کہ ٹیم ٹاس ہارے اور میچ بھی ہارے،آخر10میچزمیں اس بات کو چیلنج کے طور پر کیوں عبور نہیں کیا گیا،اب تک کی ٹاپ ون سائیڈ پشاور زلمی ہی کیوں نہ ہو،6پوائنٹس کے ساتھ وہاب ریاض دل سے اتراسکتے ہیں کہ وہ حقیقی چیمپئن ہیں؟اسی طرح آج کا میچ کھیلنے والی قلندرز اور کنگز کی ٹیمیں اپنے قلعہ کو ناقابل تسخیر سمجھ سکتی ہیں کہ 2،2 فتوحات کے باوجود ایک ایک میں ناکامی بعد میں فیلڈنگ کرتے ہوئے ہی ہوئی ہے،اسی طرح کوئی میچ نہ جیتنے والی کوئٹہ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد اپنے آپ اور اپنی ٹیم کو مکمل ناکام گردان سکتے ہیں کہ سب میچ ہارے کیونکہ تینوں میچز میں وہ ٹاس ہار گئے اور انہیں پہلے بلے بازی اور بعد میں فیلڈنگ کرنی پڑی۔
ان سب باتوں کا ایک ہی جواب ہے کہ ،نہیں!
کیونکہ حقیقت یہ ہے کہ قسمت اور ٹاس کے سکہ سے یہ چمک رہے ہیں،یہی سکہ اگرسرفراز کی حمایت میں گرا ہوتاتو وہ بھی آج ٹاپ ٹیموں میں شمار ہوتے،چنانچہ ٹاس کے سکہ پر جیتنے والی یہ ٹیمیں تاحال کھوکھلی اورقابل تسخیر ہیں،آج کا میچ کھیلنے والی قلندرز اور کنگز بھی،کیونکہ اب تک کی پرفارمنس میں یہ ٹاس کی محتاج ثابت ہوئی ہیں۔
ہاں !آج ان میں سے کوئی ٹیم ٹاس سے باہر نکل کر جیت کر دکھائے،اسے بعد میں فیلڈنگ بھی کرنی پڑے تو بھی وہ جیتےتو وہ ٹیم حقیقی چیمپئن بننے کی امیدوار ہوگی،ورنہ دوسری صورت میں فائنل کا فیصلہ بھی ٹاس پر چلا جائے گا تو بہتر ہوگا کہ وہ ٹاس کل کا آج کروالیا جائے۔
کراچی کنگز کا لاہور قلندرز کے خلاف ریکارڈ نہایت ہی قابل رشک ہے،اب تک کھیلے گئے11میچز میں سے اس نے 4جیتے اور 3ہارے،البتہ ایک میچ ٹائی کھیل کر سپر اوور میں ہارے۔اسی طرح گزشتہ 5 میچزکا ریکارڈ دیکھا جائے تو اس میں بھی کنگز کو 2-3 سے برتری حاصل ہے۔موجودہ ٹیم لائن اپ کو دیکھا جائے تو بابر اعظم بھر پور فارم میں ہیں،ان کے مقابل محمد حفیظ ہیں جو اپنی زندگی کی بہترین اننگز کھیل رہے ہیں،ساتھ میں غیر ملکی و مقامی پلیئرز کی لائن اپ موجو د ہے،اس لئے ٹکر کے مقابلے کی توقع ہے۔
میچ پاکستانی وقت کے مطابق رات 7بجے شروع ہوگا۔