بھارت سے کامیاب اخراج،اپنے ملک بحفاظت اترنے پر کھلاڑی کتنے مسرور،مایوس کون

غیر ملکی پلیئرز کے بھارت سے اخراج کا سلسلہ جاری ہے.انگلینڈ کے کھلاڑی تو جمعرات کو مکمل طور پر لندن اتر گئے تھے جبکہ نیوزی لینڈ کے پلیئرز اپنے ملک اترنا شروع نہیں ہوسکے،بھارت کے نہایت قریب ملک بنگلہ دیش کے کھلاڑیوں کو اپنے ملک پہنچنے میں زیادہ وقت لگا ہے.

بنگلہ دیشی کھلاڑی مستفیض الرحمان نے اپنے ملک پہنچتے ہی ٹویٹ کیا ہے اور ایک اچھی تصویر شیئر کرتے لکھا ہے کہ الحمد اللہ ہم بحفاظت اپنے ملک پہنچ گئے ہیں،انہوں نے راجستھان رائلز اور کولکتہ نائٹ رائیڈرز کا شکریہ ادا کیا ہے اور کہا ہے کہ ان کے تعاون کے سبب ہی یہ سب ممکن ہوسکا ہے.ان کے ساتھ دوسرے ہم وطن کھلاڑی شکیب الحسن بھی تھے.مستفیض کے ساتھ ان کی اہلیہ بھی دیکھی جاسکتی ہیں.

دوسری جانب ایک انگلش کھلاڑی جو س بٹلر نے بھی واپس اپنے ملک پہنچنے کے بعد اپنی اہلیہ اور بچی کی تصاویر شیئر کرتے لکھا ہے کہ بھارت میں ہمیشہ لطف آیا،انہوں نے شکریہ ادا کرتے لکھا ہے کہ بھارتی عوام اپنی حفاظت خود سے یقینی بنائیں.

انگلینڈ کے لئے سب سے زیادہ ٹیسٹ وکٹیں لینے والے جمی اینڈرسن نے سیزن کا پہلا کائونٹی میچ کھیل لیا ہے،انہوں نے پہلے روز اکلوتی وکٹ لی لیکن یہ وکٹ بھی اہم تھی کیونکہ انہوں نے آسٹریلیا کے معروف بیٹسمین مارنس لبوشین کا شکار کیا ہے،ان کی فرسٹ کلاس وکٹوں کی تعداد 990ہوگئی ہے اور وہ 1000وکٹ کی تکمیل کے لئے پرعزم ہیں.یہ میچ لنکا شائر اور گلیمورگن کے درمیان کھیلا جارہا ہے .پاکستانی پیسر محمد عباس کی ٹیم ہمپشائر مسلسل دوسرے میچ میں 100سے کم پر ڈھیر ہوئی ہے،عباس جواب میں تاحال صرف ایک وکٹ لے سکے ہیں.

نیوزی لینڈ کے کھلاڑی تاحال بھارت میں پھنسے ہیں،کیوی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کے نیشنل پلیئرز پریشان ہیں اور جلدی کی امیدیں چھوڑے بیٹھے ہیں جبکہ مایوسی بھی دیکھنے والی ہے.