شکیب الحسن پاگل ہوگئے،لاتوں کا استعمال ،وکٹیں اڑادیں،گالیاں بھی دیں

بنگلہ دیشی آل رائونڈر شکیب الحسن ایک بار پھر پاگل ہوگئے ہیں،انہوں نے پاکستان سپرلیگ 6کے لئے معاہدہ کر رکھا تھا لیکن اپنے ملک کی ڈھاکا پریمیئر لیگ کو انہوں نے اہمیت دی اور پی ایس ایل کھیلنے سے انکار کردیا لیکن جمعہ کو میچ کے دوران انہوں نے ایسی حرکات کیں اور ایسی روش قائم کی ہے کہ ان پر طویل پابندی کا امکان ہوگیا ہے.

محمد اسپورٹس کلب کی کپتانی کرنے والے شکیب نے یہ سب اباہانی کرکٹ کلب کے خلاف کیا،اتفاق سے شکیب اپنے ہی جیسے سینئر کھلاڑی مشفق الرحیم کو بال کر رہے تھے،ایل بی کی اپیل مسترد کئے جانے پر شکیب نے آگے بڑھ کر وکٹوں کو ٹانگ ماری اور بیلز ہوا میں اڑادیں،امپائرز بھی ششدر رہ گئے کہ ان کو کیا ہوا،شکیب نے اس دوران گالم گلوچ شروع کردی اور ایسا لگا کہ وہ امپائر کو ماریں گے اور کچھ بھی ہوجائے گا.

دوسرے واقعہ میں اسی میچ کے دوران جو جمعہ کھیلا گیا ہے،انہوں نے بھاگتے ہوئے آکر تینوں وکٹیں اکھاڑ کر پچ پر پھینک دیں اور بولتے چلے گئے،میچ میں بارش بھی ہوئی اور جب بارش کے باعث گرائونڈ سے واپس آئے تو انہوں نے مخالف ٹیم کے ہیڈ کوچ سے بھی تکرار کی ہے.

شکیب کی نئی تصاویر اور ویڈیو نے سوشل میڈیا پر نئی بحث چھیڑدی ہے اور اسے حیرانگی سے دیکھا جارہا ہے اور یہ کہاجارہا ہے کہ شکیب اپنا غصہ کنٹرول نہ کرسکے اور گرم ہوگئے لیکن وکٹوں کو لاتیں مارنا اور پھر وکٹوں کو زمین پر دے مارنا غصہ ہی نہیں بلکہ پاگل پن بھی ہے،اس پر سخت کارروائی کا مکان ہے.

بنگلہ دیش کے 34 سالہ شکیب نے ملک کے لئے 57 ٹیسٹ اور212 ایک روزہ میچ کھیل رکھے ہیں.76ٹی 20 انٹر نیشنل میچز بھی کھیلے ہیں،جواریوں سے رابطوں اور رپورٹ نہ کرنے پر انہیں 2 سال کی معطلی کی سزا بھی ملی ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں