رمیز کو لارڈز میں دلہا مل گیا،انضمام کی بھارت سے ایک خواہش ،دلچسپ رپورٹ

0 28

بھارت 500 اسکور کر لے تو مزا آجائے گا،پھر اننگ سے جیتنا آسان ہوجائے گا،یہ باتیں پاکستان کے سابق کپتان انضمام الحق نے اپنے آفیشل یو ٹیوب چینل پر کی ہیں اور ساتھ ہی انہوں نے کچھ مشورے بھی دیئے ہیں،سنچری بنانے والے کے ایل راہول کو مبارکباد بھیجی ہے جبکہ ایک اور کرکٹر رمیز راجہ کو لارڈز ٹیسٹ کے دوران بیٹسمین اچانک دلہے کی شکل میں نظر آنے لگا،جس کی بارات آرہی تھی،بینڈ باجے بج رہے تھے اور شاید موسیقی کا تڑکا تھا، گھوڑوں کا رقص بھی جاری تھا.دلچسپ بات یہ ہے کہ دونوں سابق کپتانوں کو انگلش ٹیم کی زبوں حالی پر زیادہ افسوس نہیں تھا.ان کی انجریز پر بات نہیں تھی،ٹیم میں کم بیک کرنے والے حسیب حمید کے حوالہ سے کوئی جملہ نہیں تھا،تعریف تھی تو بھارتی ٹیم کی اور اختتام تھا تو اس خواہش کے ساتھ کہ بھارت 500 بلکہ 550 اسکور کر لے،یہ دلچسپ تبصرے ہیں،تھوڑا ان کی زبانی پڑھتے ہیں.
لارڈز ٹیسٹ میں دلہے میاں مل گئے
بس لارڈز ٹیسٹ کے پہلے روز کا کھیل ختم ہوا تو پاکستان کے 2 سابق کپتانوں نے میچ کے دلہے میاں کا انتخاب کرلیا،رمیز راجہ کہتے ہیں کہ کے ایل راہول بھارتی اننگ کے دلہا بن گئے،کیا لاجواب اننگ کھیلی.تسلی کے ساتھ کھیلے،راہول بال کے نزدیک رہتے ہیں،آف اسٹمپ سے باہر جاتی بال کو چھیڑتے نہیں ہیں،راہول نے کئی اعتبار سے انگلش ماحول کے مطابق اپنے آ پ کو ڈھالا.پہلے انگلینڈ کے دورے میں 3 سے 4 ماہ ملتے تھے،16 کائونٹی میچز مل جاتے تھے،اب وقت کم ہوگیا ہے،مواقع کم ہیں ،اس لئے کم وقت میں سیٹ ہونا پڑتا ہے،پھر روہت شرما کے ساتھ اوپننگ پارٹنرشپ نے انگلینڈ کی پھونک نکال دی،جہاں تک تعلق ہے ویرات کوہلی کا،انہوں نے بھی اپنی نیچر کے خلاف اننگ سیٹ کی،انہیں بال اچھی ملی لیکن وہ درست وقت پر کھیلنے نہ کھیلنے کا فیصلہ نہ کرسکے اور دیرکر گئے.کے ایل راہول سے ہر ایک سیٹ سکتا ہے.بھارت اب گر 350سے400 رنز کرجاتاہے تو انگلینڈ کے ہاتھ سے میچ نکل جائے گا.ٹاس کا جہاں تک تعلق ہے تو انگلینڈ نے ڈر کر پہلے بیٹنگ نہیں کی کیونکہ اس کی ٹاپ آرڈر اچھی نہیں ہے،اس لئے انہوں نے اس پر بھروسہ نہیں کیا ورنہ دن میں وہ لڑھک سکتے تھے.
پاکستانی سابق کپتان کی کے ایل راہول کو مبارکباد
ایک اور سابق کپتان انضمام الحق نے لارڈز کے دوسرے ٹیسٹ کے پہلے روز کے کھیل پر اپنے تبصرے میں کہا ہے کہ بھارت کی شاندار پرفارمنس ہے،میں نے تو پہلےہی بول دیا تھا کہ بھارتی کمبی نیشن بہتر ہے.انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے 2 گھنٹے کی کنڈیشن سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کی لیکن وہ ناکام گئے،اس کا سہرا روہت شرما پر جاتا ہے،انہوں نے پریشر ختم کردیا جب کہ اس کا فائدہ کے ایل راہول نے اٹھالیا.راہول نے 6 میں سے زیادہ سنچریز ملک سے باہر بنائی ہیں،میں انہیں مبارکباد دیتا ہوں.
بھارت کیا کرے کہ انضمام کو مزا آئے گا
انضمام الحق کہتے ہیں کہ بھارتی کھلاڑی پھنس کر نہیں کھیلے،رنزبناتے رہے،اب ویرات کوہلی کو دیکھ لیں کہ وہ اپنے اسٹائل سے ہٹ کر کھیل رہا تھا،اس کا سٹرائیک ریٹ کم تھا،اس لئے اگر وہ اپنی نیچرل گیم نہیں کرے گا تو ناکام ہوجائے گا.عام حالات میں اگر یہ 105 بالیں کھیلے گا تو 60سے 65 کرے گا لیکن لارڈز میں وہ 42 کرسکا.انضمام کہتے ہیں کہ بھارت اگر 500 کرجائے تو مزا ہی آجائے گا،اب بھی اسے برتری ہے.دوسرا دن نہایت اہم ہے.
پاکستان ٹیسٹ کے دن کا سیشن نظر انداز،2 کلمے تک نہ بولے
پاکستان کے دونوں سپر اسٹارز نے جب میچ پر اپنا تبصرہ شروع کیا تو پاکستان کے ویسٹ انڈیز کے خلاف دونوں اوپنرز باہر ہوچکے تھے ،کیونکہ انہوں نے پہلے دن کے کھیل کے خاتمہ پر ہی اپنی بات چیت ریکارڈ کی لیکن دونوں نے پاکستان ویسٹ انڈیز ٹیسٹ کے پہلے دن کے کھیل کے حوالہ سے ایک جملہ بھی بولنے کی کوشش نہیں کی،یہ سب کے لئے حیرت انگیز بات ہے،کہا جاسکتا ہے کہ دن مکمل نہیں ہوا تھا تو کوئی بات نہیں.2 یا 1 منٹ اس بات پر نکالا جاسکتا تھا کہ ٹاس کے کیا نتائج ہونگے،ٹیم سلیکشن کیسی تھی،اوپنرز کے جلد جانے کے بعد پاکستانی ٹیم کو کیا کرنا چاہئے اور یہاں بھی اپنی خواہش بتادیتے کہ پاکستان اتنا اسکور کر لے تو انہیں خوشی ہوگی مگر مجال ہے کہ اس پر کسی کو کچھ کہنے کی توفیق ملی ہو اور وجہ صاف ظاہر ہے.
لارڈز ٹیسٹ کے پہلے روز انگلش ٹیم نے ٹاس جیتا،پہلے فیلڈنگ کی،رمیز کے نزدیک یہ بزدلی کی وجہ سے بھی تھا اور انضمام کے نزدیک یہ صرف پہلے 2 گھنٹے کی کنڈیشن سے فائدہ اٹھانے کی کوشش تھی .ویرات کوہلی رمیز کے مطابق اچھی بال پر آئوٹ ہوئے تو انضمام کے نزدیک انہوں نے زیادہ دفاعی کھیل کھیلا جو ان کی فطرت کے خلاف ہے،اس لئے وہ جلد آئوٹ ہوگئے.دونوں کا اس بات پر اتفاق ہے اور خواہش بھی ہے کہ بھارت بڑا اسکور کرے اور انگلینڈ کو اننگ سے ہرانے کی کوشش کرے.
کرک سین کا مشورہ
کرک سین ان دونوں سابق کپتانوں کو یہ بتانا چاہے گا کہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں بسنے والے پاکستانی بھی بہت ہیں اور وہ ان کے تبصرے اپنی ٹیم کے حوالہ سے بھی سننا چاہیں گے،ممکن ہے کہ پاکستان ویسٹ انڈیز میچ کے پہلے دن کے اختتام پر یا جمعہ کی دوپہر تک اس پر بھی ان کی گفتگو آجائے لیکن مزا تو تب آتا نہ کہ دن ختم ہونے سے قبل اپنی کچھ تجاویز دیتے یا تبصرہ ایسا کرتے جو وقت سے قبل بہت حد تک سامنے آجاتا.
غیر جانبداری یا جانبداری
بھارت نے لارڈز ٹیسٹ کے پہلے دن 3وکٹ کے نقصان پر 276 اسکور کرلئے ہیں .کے ایل راہول 127 پر کھیل رہے ہیں جب کہ روہت شرما 83 کر کے گئے.انگلینڈ کے جمی اینڈرسن نے 2 وکٹیں لی ہیں.اس سے قبل جوئے روٹ کے‌حق میں ٹاس کا سکہ گرا تھا اور انہوں نے پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا تھا.بھارتی کرکٹ بورڈ کے صدر سابق کپتان ساروگنگولی لارڈز میں ہی موجود ہیں اور انہوں نے پہلے روز کا کھیل گرائونڈ میں بیٹھ کر دیکھا ہے اور وہ اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ یہ ٹیسٹ میچ بھارت جیت جائے گا.غیر جاندار تجزیہ نگار دونوں سائیڈز کی بات کرنا پسند کریں گے،انگلینڈ کی بائولنگ ناکام ہوئی تو کیوں،سٹورٹ براڈ کہاں گئے،جمی اینڈرسن کس تکلیف سے کھیل رہے ہیں جب کہ معین علی کی واپسی ہوئی ہے تو کیوں ہوئی ہے اور وہ کیا کرسکیں گے.باتیں نہیں ہیں بلکہ عام طور پر ایسا ہی ڈسکس کیا جاتا ہے.
میچ کے پہلے روز کی خبر کے لئے اسے ملاحظہ فرمائیں
ہوم آف کرکٹ میں بھارتی پہلے دن کے لارڈ ،بہتر اسکور،انگلش بائولرز بے بس

Leave A Reply

Your email address will not be published.