قلندرز کی خود سے خود کشی،ملتان،پشاور کی سیٹ پکی،لاہور کی کنجی کراچی کے ہاتھوں میں آگئی

0 30

کرک سین پی ایس ایل 6 کے حوالہ سے وقت سے قبل پیش گوئی کرتا آرہا ہے اور اسکے لئے کرک سین کے گزشتہ 4 روز کے تجزیے دیکھے جاسکتے ہیں قلندرز کی خود سے خود کشی،, اور خاص کر آخری 2 دن کے کہ ان میں واضح کیا تھا کہ پشاور زلمی کو رن ریٹ پر برتری حاصل ہوگی اوراسی بنیاد پر وہ کوالیفائی کرجائے گا،اب اس خبر و تبصرے میں آپ کو قلندرز کی شکست،ناکامی کی بنیادی وجہ پڑھنے کو ملے گی،ساتھ میں پی ایس ایل 6 کے پلے آف میں جانے والی 3 ٹیموں اسلام آباد،ملتان اور پشاور کی کنفرمیشن ملے گی کیونکہ نیت رن ریٹ میں پشاور کو اس نے پچھاڑ دیا ہے،آج اگر اس نے اسلام آباد سے مقابلہ کرکے میچ ہار بھی دیا تو اس کی دوسری پوزیشن ہی رہے گی اور اسے پلے آف سے نکلنے کا کوئی خطرہ نہیں رہے گا،ساتھ میں پشاور زلمی نے لاہور سے نیٹ رن ریٹ بہتر ہونے کی وجہ سے ٹکٹ کٹوالی ہے،آپ کو اس میں یہ بھی ملے گا کہ کراچی کے پاس کیا راستہ ہے اور لاہور کے پاس پلے آف میں جانے کے لئے کیا آپشن باقی بچی ہے،آج کا پہلا میچ سب کچھ کھول دے گا،اس خبر میں شاہ نواز دھانی کا اعزاز بھی ملاحظہ فرمائیں .
لاہور قلندرز کی خود کشی
لاہور قلندرز کی خود سے خود کشی،ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ گلے پڑگیا،گزشتہ 3 میچز میں مسلسل ہدف کے تعاقب میں ناکامی کے باوجود ملتان سلطانز کے خلاف اپنے آخری اور اہم ترین میچ میں ایک بار پھر بعد میں بیٹنگ کا فیصلہ کرکے خود کو شکست اور پی ایس ایل 6 سے اخراج کے دھانے پر پہنچادیا،ملتان سلطان کی اننگ کے 19 ویں اوور تک حاوی رہنے والے قلندر زآخری اوور میں حارث رئوف سے 24 رنز پڑوانے کے بعد بیٹنگ میں حسب توقع و حسب سابق ناکام ہوگئے،فخر زمان،محمد حفیظ ،بین ڈنک اور سہیل اختر سمیت سب بے بس رہے.سلطانز نے 80 رنز سے کامیابی حاصل کرکے قریب پلے آف کی ٹکٹ کٹوالی ہے اور قلندرز کی قسمت کی چابی اب کنگز کے ہاتھوں میں چلی گئی ہے،جس کا آج 19 جون کو کوئٹہ سے ٹاکرا ہوگا،کراچی کنگز ہارے تو کوئٹہ کے ساتھ باہر ہونگے اور اسلام آباد،پشاور زلمی،ملتان سلطانز اور لاہور قلندرز فائنل فور میں داخل ہونگے اور اگر کراچی کنگز جیت گئے تو لاہور قلندرز پوائنٹس برابر ہونے کے باوجود نیٹ رن ریٹ میں خرابی پر کوئٹہ کے ساتھ باہر ہونگے،اس طرح کہا جاسکتا ہے کہ اسلام آباد کے ساتھ ملتان ،پشاور نے قریب ٹکٹ حاصل کرلی ہے.سلطانز پوائنٹس ٹیبل پر دوسرے نمبر پر آگئے ہیں،زلمی کا تیسرا نمبر ہے،قلندرز ٹیم 169 کے جواب میں 16ویں اوور میں صرف 89پر ڈھیر ہوگئی ہے.
تعاقب کا احوال
شیخ زید کرکٹ اسٹیڈیم ابو ظہبی میں لاہور قلندرز نے جب 170رنزکا تعاقب شروع کیا تو بظاہر یہ اتنا مشکل نہیں تھا لیکن ملتان سلطانز کے ابتدائی بائولرز نے اعلیٰ گیند بازی کرتے ہوئے ہوئے بین ڈنک،فخرزمان اور محمد حفیظ کو 34 کے مجموعہ تک پویلین بھیج دیا. فخر 15 بالز پر 13،اوپنر کے طور پر آنے والے بین ڈنک 4 بالز پر 5 اور سب سے زیادہ تجربہ کار بیٹسمین محمد حفیظ 13 بالز پر 14 رنز کے مہمان ثابت ہوئے.دھانی ،عمران خان اور موزا رابانی نے شروع کے 3 آئوٹ کئے.اوپنر سے نمبر 5 پر آکر بیٹنگ کرنے والے کپتان سہیل اختر سے ٹیم کو اور فینز کو اچھی امیدیں وابستہ تھیں،وہ شروع میں نہایت محتاط تھے،ان کے ساتھ آغا سلمان موجود تھے لیکن اسکور کی رفتار گرتی گئی،الٹی سیدھی شاٹس کی کوشش میں 48 کے مجموعہ پر سہیل اختر 5 اور 52 کے مجموعہ پر 13 رنزبناکر چلتے بنے.11ویں اوور میں 52 پر آدھی ٹیم پویلین لوٹ چکی تھی.قلندرزکی آخری امید ٹم ڈیوڈ میدان میں اترے،انہوں نے محتاط بیٹنگ کی لیکن جیمز فالکنر نے اپنے پہلے 21 اسکور صرف8 بالز پر بناکر کچھ سنسنی پھیلانی شروع کی.12 اوورز کے اختتام پر قلندرز کا اسکور 5 وکٹ پر 77 تھا.48 بالز پر93 رنزددرکار تھے کہ ٹم ڈیوڈ نے عمران خان کو چوکا جڑدیا لیکن اسی اوور میں عمران خان نے ٹم ڈیوڈ کو بولڈ کردیا،وہ 8 بالز پر 10 کرسکے.ملتان نے 83پر چھٹی وکٹ اڑادی تھی.85 کے مجموعہ پر شاہ نواز دھانی نے فالکنر کو بھی باہر کا راستہ دکھادیا جو 11 بالز پر 22 رنز کرسکے.اب قلندرز کی شکست یقینی ہوگئی تھی.اسی اوور میں وکٹ کیپر محمدرضوان نے راشد خان کا ناقابل یقین کیچ پکڑ کر انہیں بھی 2پر واپس بھیج دیا.14 اوورز میں85پر 8 آئوٹ ہوگئے تھے.87 پر 9ویں وکٹ حارث رئوف کی گری ،یہ عمران خان کی تیسری وکٹ تھی.لاہور قلندرز کی ٹیم 15 اوورز ایک بال میں 89 رنز پر ڈھیر ہوگئی اور 80رنز سے میچ ہارگئی.شاہ نواز دھانی کی بائولنگ دیکھیں کہ 3 اوورز ایک بال میں ایک اوور میڈن تھا.5رنزکے عوض 4 وکٹیں تھیں.پی ایس ایل 6 میں ہائی وکٹ ٹیکر بھی بن گئے ہیں.عمران خان نے 3اور موزاربانی نے2 آئوٹ کئے.
لاہور قلندرز
اس سے قبل لاہور قلندرز کے کپتان سہیل اختر کے ٹاس جیتنے اور دعوت ملنے پر ملتان سلطانز نے 8 وکٹ پر169 اسکور کئے ،ایک موقع پر 19 اوورز میں اس کا اسکور 145 تھا اور 160سے زائد کی امید نہیں تھی لیکن سہیل تنویر نے حارث رئوف کے آخری اوور میں 24 رنز بٹور کر معاملہ ہی تبدیل کردیا اور اسکور 169 تک لے گئے،تنویر نے صرف 9 بالز پر26 کی اننگ کھیلی ،انکے علاوہ صہیب مقصود 40 بالز پر 60 کر کے قابل ذکر رہے.قلندرز کی جانب سے شاہین آفریدی نے 23 رنز دے کر 3 جبکہ فالکنر نے30رنز دے کر 2 آئوٹ کئے،حارث رئوف کو 4اوورز میں 51 کی مار پڑی،ایک وکٹ لے سکے،اسی طرح راشد خان اور حمد دانیال نے بھی ایک ایک وکٹ لی.قلندرز کا یہ 10 واں و آخری میچ تھا.
‘تمام میچز مکمل
پی ایس ایل 6 میں پشاور کے بعد لاہور کے بھی تمام میچز مکمل ہوگئے ہیں،دونوں ٹیموں کے 10،10 میچزمیں 10،10 ہی پوائنٹس ہیں لیکن پشاور زلمی کا نیٹ رن ریٹ آسمانوں پر ہے،اس لئے اگر 4 ٹیموں کے بھی 10،10 پوائنٹس ہوگئے تو بھی قلندرز کے باہر ہونے کے امکانات ہونگے.اس صورتحال میں کہ جب ملتان سلطانز نے اپنے 9 ویں میچ میں پوائنٹس کی تعداد 10 کرلی ہے اور اس کا ایک میچ باقی ہے تو اس کے امکانات زیادہ ہیں،کراچی کنگز نے آج اگر کو ئٹہ کو ہرادیا تو اس کے بعد 10 پوائنٹس ہونگے.کراچی ٹیم اگر ہارگئی تو پھر قلندرز بھی کوالیفائی کرجائیں گے لیکن اگر کراچی جیت گئے تو ان کے بھی 10 پوائنٹس ہوجائیں گے،آج لیگ کا آخری میچ ملتان اور اسلام آباد کھیلیں گے.ملتان جیت گیا تو اسلام آباد کے بعد ملتان 12 پوائنٹس کے ساتھ کوالیفائی کرجائے گا.کراچی میچ جیتنے سے لاہور قلندرز سے نیٹ رن ریٹ اچھا ہونے پر پلے آف میں داخل ہوگا جبکہ پشاور زلمی بھی نیٹ رن ریٹ کی وہ سے ٹکٹ کٹوالے گا اور اگر ملتان ہار گیا تو کراچی،ملتان،لاہور،پشاور سب کے 10،10 پوائنٹس ہونگے.نیٹ رن ریٹ میں پشاور بھی آگے ہے.لاہور قلندرز شدید خطرات میں چلا جائے گا،لاہور کے لئے واحد آپشن یہ ہے کہ کوئٹہ اس کی مدد کرے اور آج کراچی کنگز کو ہرادے،ملتان ہارے بھی تو نیٹ رن ریٹ پر اگلے مرحلے میں نکل جائے گا. قلندرز کی خود سے خود کشی،

Leave A Reply

Your email address will not be published.