پی ایس ایل 6کا نمبر 6میچ آج،ٹاس کی افادیت کم ،پہلےبیٹنگ والی ٹیم پہلی بار جیت سکے گی

تجزیہ :عمران عثمانی

پاکستان سپر لیگ 6 کے 5میچز ہوگئے ہیں،اب تک تمام میچز میں ٹاس جیتنے والی ٹیم فاتح رہی ہے اور اس کی بنیادی وجہ ایک ہی تھی کہ اس نے پہلے بیٹنگ کی بجائے بائولنگ کو ترجیح دی،اس طرح دیکھا جائے تو کوئٹیہ گلیڈی ایٹرز کے کپتان سرفراز احمد اور ملتان سلطانز کے کپتان محمد رضوان ایک بھی ٹاس نہیں جیت سکے اور دونوں میچزکے ٹاس ہارنے پر بعدمیں فیلڈنگ کرتے ہوئے ہار گئے،دوسرا اتفاق یہ تھا کہ گلیڈی ایٹرز اور سلطانز دونوں نے اپنے آخری میچزمیں بہتر سے بہتر ہدف سیٹ کیا،سرفرزا الیون نے 178 اور رضوان الیون نے193 رنزکئے لیکن وہی بات کہ نہ بڑا اسکور کام آیا نہ بائولنگ میں ابتدائی کامیابیاں فائدہ دے سکیں،ہر حال میں ہدف کاتعاقب کرنے والی سائیڈ فاتح قرار پائی۔
وہاب ریاض کے دماغ پر نادیدہ خوف،رمیز کو حفیظ بھائی کہدیا،آواز غائب،آفریدی کی ڈانٹ ڈپٹ
پی ایس ایل 6کی یہ نئی روایت نہایت ہی خوفناک اور حیران کن ہے،آہستہ آہستہ دیکھنے والوں کے ذہم میں یہ بات بیٹھتی جارہی ہے کہ ٹاس ہارے تو سمجھو میچ ہارے،اگر یہ بات مان لی جائے تو پھر پہلی اننگ میں 200پلس اسکور کرنے والی ٹیم دوسری اننگ میں محض اس لئے ہی ہاتھ چھوڑ دے گی کی 50کی شراکت لگ گئی،بس اب میچ ہارے،اس خوف،ناامیدی اور ایسی روایت کو کون توڑے گا جو کرکٹ شائقین کے لئے بھی دلچسپی سے خالی ہوجائے گی کہ وہ ٹاس ہوتے ہی ذہن بنالیں گے کہ اس نےہارنا اور اس نے جیتنا ہے،اس کے لئے آج 24 فروری کا دن نہایت ہی اہمیت کا حامل ہوگا۔
سوال یہ ہےکہ آج کا دن ہی کیوں اہم ہوگا؟یہ روایت بدلنے کے لئے کل کا دن اہم کیوں نہیں تھا اور آنے والا کل کیوں غیر اہم ہے؟
سلطانز کی خوشیوں پرپی ایس ایل 6 روایت کا حملہ،زلمی 6وکٹ سے کامیاب
پی ایس ایل 6 کا نمبر 6میچ آج 24 فروری 2021 کو نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں دفاعی چیمپئن کراچی کنگز اور 2مرتبہ کی چیمپئن اسلام آباد یونائیٹڈ کے درمیان کھیلا جائے گا،دونوں نے اب تک ایک ایک میچ ہی کھیلا ہے،دونوں ہی ناقابل شکست ہیں۔کراچی نے کوئٹہ اور اسلام آباد نے ملتان کو شکست دے رکھی ہے اور دونوں نے ہدف کے تعاقب کے ساتھ کامیابی کو گلے لگایا تھا،پہلی باراب تک کی فاتح ٹیموں میں سے کسی ایک کو پہلے بلے بازی کرنی پڑے گی اور یہ وہ ٹیسٹ ہوگا جس کی طرف اشارہ کیا ہے کہ آج ان میں سے پہلے بلے بازی کرنے والی سائیڈ جیت سکتی ہےاور 5میچز سے جاری روایت توڑ سکتی ہے۔دونوں نے بعد میں ہدف کے تعاقب کا تجربہ کرلیا ہے اور پہلے بیٹنگ کا مزا نہیں چکھا،اس لئے وہ ابتدائی بیٹنگ کی پلاننگ کو بعد کے تجربے کی روشنی میں سیٹ کریں گی۔میرا ماننا ہے کہ ان دونوں میں سے جو بھی پہلے کھیلا،وہ 200سے 220کے درمیان مجموعہ کو سیٹ کرنے کی کوشش کرے گا اور دوسرا بعد میں فیلڈنگ پر خاص توجہ ہوگی کہ ایک چانس بھی ضائع نہیں کرنا۔ایسا لگتا ہے کہ آج ہرانی روایت ٹوٹ جائےگی۔2020کے دونوں میچز کراچی کنگز نے جیتے تھے،یونائیٹڈ نے 2019 کے دونوں جیت لئے تھے،دونوں کے مابین اب تک کھیلے گئے13میچز میں یونائیٹڈ کو برتری حاصل ہے،اس نے 7جیتے ہیں اور کراچی کو 5فتوحات ملی ہیں،ریکارڈ میں کراچی کو خسارہ ہے لیکن حالیہ کارکردگی میں اسے برتری حاصل ہے۔دوسری اہم بات موجودہ کمبی نیشن ہے۔یہ بات تو طے ہے کہ اسلام آباد کے پاس فل بیٹری موجود ہے ،اگر اس نے بابر اعظم کو بروقت قابو کرلیا تو فائدے میں رہیں گے اوریا پھر محمد عامر کے ابتدائی 2اوورز سنگل کے ساتھ گزارلئے تو اٹیکنگ بہتر ہوجائے گی۔دونوں کا وننگ کمبی نیشن سیٹ ہے ،شاید بڑی تبدیلی نہ ہو۔
پاکستانی وقت کے مطابق میچ رات 7بجے شروع ہوگا،اب تک کی پوزیشن کے مطابق قلندرز 2میچزمیں ناقابل شکست رہتے ہوئے 4پوائنٹس کے ساتھ پہلے،کراچی،اسلام آباد ایک ایک میچ کے بعد 2،2، پوائنٹس کے ساتھ دوسرے وتیسرے نمبر پر ہے۔پشاور زلمی ایک فتح و ایک ناکامی کے بعد 2پوائنٹس لئے چوتھے نمبرپر ہے۔ملتان سلطانز 2ناکامیوں اور صفر پوائنٹ کے ساتھ 5ویں اور کوئٹی بھی اسی فیگر کے ساتھ چھٹے و آخری نمبرپرہے۔