پی ایس ایل6کا نیا آغاز،ابو ظہبی میں اسلام آباد کی ملی جلی بیٹنگ،قلندرز کو چکری ہدف دے دیا

عمران عثمانی کی تفصیلی رپورٹ

پاکستان سپر لیگ 6کے نئے آغاز کے ساتھ ہی موسم،کنڈیشنز اور اوس کے اثرات نمایاں،اننگ میں زیادہ تر وقت شدید دبائو میں آنے اور100رنزسے قبل 7وکٹیں گنوانے والی اسلام آباد یونائیٹڈ ٹیم نے لاہور قلندرز کو جیت کے لئے 144 رنزکا ہدف دے دیا،آخری اوورز میں محمد وسیم اور فہیم اشرف کی شاندار بلے بازی کی وجہ سے اتنے اسکور ممکن ہوئے،ایک موقع پر 120 یا 130 بھی بنتے مشکل دکھائی دے رہے تھے.وسیم10پر ناقابل شکست گئے.یونائیٹڈ نے 9وکٹ پر 143رنزکئے.راشد کے 4اوورز میں صرف 9رنزبنے.

پاکستان سپر لیگ 6 کے سیشن 2کی وسل بج گئی ہے،پی ایس ایل کا میلہ کراچی سے مختلف بل کھاتا ابو ظہبی میں شروع ہوگیا ہے،9 جون بدھ کی شب پی ایس ایل 6 کا 15 وں اور نئے مقام پر پہلا میچ شروع ہوگیا.

شیخ زید کرکٹ اسٹیڈیم میں قلندرز کے کپتان سہیل اختر نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا اور اسلام آباد یونائیٹڈ کو بیٹنگ کی دعوت دے دی،جیسا کہ کرک سین نے لکھا تھا کہ موسم ،وکٹ کی کنڈیشن اور اوس کی وجہ سے ابو ظہبی میں کھیلنا آسان نہیں ہوگا،کیچز بھی‌ڈراپ ہونگے تو کچھ ایسا ہی دیکھنے کو ملا.

قلندرز کے شاہین آفریدی نے بائولنگ کا آغاز کیا ،آسٹریلیا سے تعلق رکھنے والے عثمان خواجہ نے پہلی گیند کھیلی،اہم بات یہ رہی کہ شروع کی 3 بالز پر وہ کوئی اسکور نہ کرسکے،چوتھی بال پر ایسا شاٹ کھیلا جو سیدھا حارث رئوف کی جانب گیا لیکن حارث کیچ پکڑنے میں ناکام ہوگئے لیکن بہر حال سنگل بن گیا،اگلی 2 بالز منرو نے کھیلیں اور ایک سکور لیا،اس طرح پہلے اوورمیں 2 اسکور کئے.کولن منرو نے جیمز فاکلنر کو اگلے اوور میں چوکا اور چھکا لگا کر اپنے عزائم ظاہر کئے لیکن اوور کی 5 ویں بال پر فالکنر نے حساب برابر کردیا اور منرو کو11کے انفرادی اسکور پر بولڈ کیا،یونائیٹڈ کا اسکور اس وقت 12 تھا،روحیل نذیر نے آتے ہی چوکا لگا کر دوسرے اوور کا اختتام 16اسکور پر کردیا.عثمان خواجہ نے اننگ کے تیسرے اور شاہین کے دوسرے اوور میں 2 چوکے لگاکر صورتحال کنٹرول میں کرلی تھی ،اس اوور میں بننے والے 10رنزکے بعد 3 اوورز میں اسکور ایک وکٹ پر 26 بہتر تھا،اننگ کے چوتھے اوور میں فالکنر نے روحیل نذیر کو فخرزمان کےکیچ کی صورت میں شکار کرلیا،وہ 5 بالز پر صرف 8کرسکے.4اوورز میں اسکور 2وکٹ پر 33 ہوگیا تھا.

اگلے اوور کے لئے احمد دانیال آئے اور ان کے اوور میں8رنزبنے،اسلام آباد کا 5اوورز میں2وکٹ پر 41 اسکور ٹھیک تھا،یہاں عقل اور دانش مندی کی ضرورت تھی،اس ی ایوریج کا مطلب یہ بننا چاہئے تھا کہ 20اوورز میں 8وکٹ پر 164 اسکور،یہ بہت اچھا ٹوٹل ہوتا لیکن جب کپتان خود ہی غیر ذمہ دارانہ ہٹ کھیلے تو پیچھے کیا بچے گا،چھٹے اوور میں شاداب خان نے فالکنر کی گیند پراپنے حریف کپتان سہیل اختر کو کیچ دے دیا،وہ8 بالز پر 7 ہی کرسکے،یہاں سے یونائیٹڈ کا زوال شروع ہوا،اوور میں صرف 2رنزبنے.اننگ کے اگلے مطلب 7ویں اوور میں اسلام آباد کو بڑا نقصان اٹھانا پڑا،اب تک کے سیٹ بیٹسمین عثمان خواجہ حارچ رئوف کا شکار بنے جو پہلا وور کر رہے تھے،خواجہ17 بالز پر 18کرکت فالکنر کو کیچ دے گئے.اسکور کی رفتار بھی سلو ہوگئی،پہلے 5اوورز میں 41 رنزبنانے والی ٹیم اگلے 5اوورز میں صرف 2وکٹ کھوکر 27ہی کرسکی،اس کے نتیجہ میں ٹیم پر دبائو بھی آگیا،فالکنر کے اوورز مکمل ہوگئے تھے،انہوں نے 4اوورز میں 32رنز دے کر 3وکٹیں لیں.

اننگ کے 12ویں اوور میں افتخار احمد 16 بالز پر 12کر کے احمد دانیال کا نشانہ بنے،اس کے بعد جیسے وکٹوں کی لائن لگ گئی.13ویں اوور میں حسین طلعت14رنزبناکر افغان اسپنر راشد خان کے ہاتھوں کلین بولڈ ہوگئے.80پر6کھلاڑی پویلین جاچکے تھے.اننگ کے 15ویں اوور میں آصف علی بھی مایوس کرگئے اور محمد حفیظ کے خوبصورت کیچ کی وجہ سے کریز چھوڑنے پر مجبور ہوئے،انٹر نیشنل کرکٹ میں بھی مکمل ناکامی کے بعد وہ یہاں ناز ک موقع پر بھی فلاپ ہوگئے،ان کی وکٹ احمد دانیا کے حصہ میں آئی .9بالز ضائع کرنے والے صرف ہی کرسکے.یہ اوور بہر حال یونائیٹڈ کے لئے یوں اچھا تھا کہ بائی کے 4رنزکے ساتھ ایک اور بائونڈری بھی لگی اور 11اسکور بنے،یوں 15اوورز میں اسکور 7وکٹ پر 99 ہوگیا تھا.راشد خان نے اننگ کے 16ویں اوور میں صرف 2ہی اسکور دیئے.یونائیٹڈ کے 100 اسکور مکمل ہوگئے تھے.

اسلام آباد کو حسن علی سے بڑی امیدیں وابستہ تھیں جو خاصی دیر سے وکٹ پر موجود تھے اور سیٹ ہونے کی کوشش کر رہے تھے لیکن وہ بھی14 رنزبناکر حارث رئوف کی بال پر شاہین آفریدی کو کیچ دے گئے.انہوں نے 9بالز کھیلیں.17ویں اوور میں 9رنزبننے سے مجموعہ110تک چلا گیا تھا.اب فہیم اشرف سے توقعات تھیں کہ وہ کچھ ہاتھ گھمائیں ،انہوں نے 18ویں اوور میں چوکا لگا کر کچھ بہتر کرنے کی کوشش کی،2چوکے لگاکر اسکور 123 کردیا تھا.

احمد دانیال نے 4اوورز میں 29 اور حارث رئوف نے بھی 4اوورز میں 28 رنز دے کر 2،2 وکٹیں لیں،فالکنر نے 32 رنزکے عوض 3 اورراشد خان نے کمال ہی کی ،4اوورز میں صرف 9رنزکے عوض ایک وکٹ لی.سب سے مہنگے بائولر شاہین آفریدی رہے،انہوں نے4 اوور میں 37رنز دیئے ایک وکٹ لی،آخری اوور میں 27رنزبنانے والے فہیم اشرف کواپنی ہی بال پر کیچ پکڑ کر رخصت کردیا،انہوں نے 24 بالز کھیلیں.2 چوکے ایک چھکا لگایا.اسلام آباد ٹیم 9وکٹ پر 143رنز کرنے میں کامیاب رہی.

اپنا تبصرہ بھیجیں