پروٹیز کا ٹیکا،ورلڈ چیمپئن کا دھڑن تختہ،بھارتی خاتون کرکٹر کا پاکستانی ویمنز ٹیم کو سبق

0 36

ورلڈ ٹی 20 چیمپئن ویسٹ انڈیز کا دھڑن تختہ،فیصلہ کن ٹی 20میچ میں جنوبی افریقا نے25 رنز سے ٹیکا لگا کر 5 میچزکی سیریز 2-3 سے اپنے نام کرلی پروٹیز کا ٹیکا،ورلڈ چیمپئن ,ہے.میزبان کیریبین سائیڈ 168 کے جواب میں 9وکٹ پر 143 تک محدود ہوگئی .گیل چلے نہ پولارڈ،ایک کے علاوہ سب کا فلاپ شو.
کیا وہ اس کے لئے تیار ہے
ورلڈ ٹی 20 چیمپئن ویسٹ انڈیز نے اس سال اپنے اعزاز کا دفاع کرنا ہے،کیا وہ اس کے لئے تیار ہے؟کیریبین کیمپ بوڑھے کرس گیل کو اب بھی کھلانے پر مجبورہے کیونکہ یونیورس باس لیول کا کوئی متبادل ملک میں نہیں ہے لیکن حالت یہ ہے کہ گیل مسلسل مواقع پانے کے بعد بھی اصل باس کے روپ میں نہیں آرہے ہیں.سینٹ جارج میں جنوبی افریقا کے خلاف 5 ٹی 20میچزکی سیریز کا فیصلہ کن میچ ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شب کھیلا گیا جو اب سے تھوڑی دیر قبل ختم ہوا ہے،اس میں جنوبی افریقا نے پہلے کھیل کر168 رنزبنائے اور اس کے4 کھلاڑی آئوٹ ہوئے.اننگ کی خاص بات یہ تھی کہ پروٹیز کا صفر پر ایک آئوٹ ہوگیا تھا جب کپتان تیمبا باووما نیا تجربہ کرتے ہوئے اوپر آئے اور کھاتہ کھولے بناہی چلے گئے،ایڈن مارکرم اور کوئنٹن ڈی کاک نے اس کے بعد وہ الٹھی چارج کیا کہ 14 اوورز میں 128 رنز جوڑ لئے،یہ 9 سے زائد کی اوسط تھی،اب اگلے 6 اوورز میں کم سے کم 12 کی اوسط سےا سکور بنانے کا حق تھا جس کا مطلب یہ ہوتا کہ ٹوٹل 200سے اوپر جاتا،یہاں ویسٹ ابڈین بائولرز نے کم بیک کیا ،42 بالز پر 60کرنے والے ڈی کاک آئوٹ ہوگئے تو 2 اوورز بعد ایڈن مارکرم 48 بالز پر 70کرکے چلتے بنے،اس کے بعد پروٹیز بیٹسمین اسکور بنانا ہی بھول گئے،آخری 6 اوورز میں صرف 40رنز جوڑ سکے،اس کا مطلب یہ ہوا کہ ٹیم کے پاس اننگ کے آخری اہم ترین اوورز کھیلنے والے اچھے ہارڈ ہٹرز نہیں ہیں کہ وکٹیں ہونے کے باوجود 36 بالز پر40 اسکور بن پائے،بہر حال ویسٹ انڈین بائولرز نے کلاسیکل گیند بازی کی اور پروٹیز کو 4وکٹ پر 168 تک محدود کردیا.فیڈل ایڈوارڈ نے 19رنز کے عوض 2 وکٹیں لیں.
کیریبین سائیڈ
کیریبین سائیڈ نے 169 رنزکا پیچھا شروع کیا تو اکیلے الوین لیوس ہی ماردھاڑ کرتے نظر آئے،ان کی تیز بیٹنگ کی وجہ سے ویسٹ انڈیز کو لینڈل سمنز کے 3 اور کرس گیل کے11پر آئوٹ ہونے کا زیادہ بوجھ نہیں اٹھانا پڑا کیونکہ جس وقت دوسری وکٹ گری تو اسکور 65 ہوگیا تھا لیکن 75کے مجموعہ پر 34 بالز پر52 کی اننگ کھیلنے والے ایون لیوس گئے تو پروٹیز کو پر لگ گئے ،پھر110 تک 5 اور125پر چھٹی وکٹ گراکر میزبان ٹیم کو اس نے گہری کھائی میں دھکیل دیا. شیمرون ہیٹمیئر 33،کپتان کیرون پولارڈ 13 اور آندرے رسل صفر پر گئے تو کالی آندھی کا زور ٹوٹنے لگا.آخری 15بالز پر 43 اسکور مشکل لگ رہے تھے،اسی 18 ویں اوور میں نکولس پورن نے 2 چھکے لگا کر سنسنی پھیلادی.12 بالز پر 30 رنز میزبان تماشائیوں کو آسان لگنے لگے،یہ خوشی عارضی ثابت ہوئی کیونکہ اگلے اوور میں نکولس پورن 20 کر کے یہ گئے اور وہ گئے،چنانچہ ویسٹ انڈیز ٹیم مقررہ اوورز میں 9وکٹ پر 143کرکے 25 رنزکی بڑی شکست کا شکار ہوگئی،ہوم گرائونڈز میں سیریز بھی ہارگئی،پروٹیز کی جانب سے لنگی نیگیڈی نے سب سے زیادہ 3 کھلاڑی آئوٹ کئے. 
ریکارڈز بنتے ہی ٹوٹنے کے لئےہیں
ریکارڈز بنتے ہی ٹوٹنے کے لئےہیں لیکن یہ وہ توڑتے ہیں جو محنت کرتے ہیں،پرفارم کرتے اور غلطیوں سے سیکھتے ہیں،بھارتی کپتان متھالی راج نے خواتین کرکٹ میں بطور بیٹسمین سب سے زیادہ اسکور بنانے کا ورلڈ ریکارڈ قائم کردیا ہے،یہی نہیں بلکہ انگلینڈ کے خلاف ان کی 75رنزکی اننگ نے بھارتی ٹیم کو انگلینڈ میں ون ڈے فتح دلوادی ہے،متھالی راج کا آل ٹائم اسکور 10277 ہوگیا ہے اور وہ انگلینڈ کی چارلٹ ایڈوارڈ سے آگے نکل گئی ہیں جو اپنی انٹر نیشنل کرکٹ سے کنارہ کشی اختیار کرگئی ہیں.اب ایک چرف خواتین کرکٹ میں ہمسایہ ملک بھارت کا یہ مقام ہے تو دوسری پاکستانی خواتین ٹیم کو دیکھ لیں کہ ایک رات قبل وہ ویسٹ انڈیز کے خلاف ایک آسان ٹی 20میچ جیت نہیں سکیں،126 رنزکا ہدف کیا حیثیت رکھتا تھا لیکن ٹیم کی کوئی کھلاڑی بھی 6کی اوسط سے ہی اسکور نہیں بٹور سکی اور 18 اوورز میں 103 تک پہ پہنچ پائی تھیں کہ بارش کے سبب میچ روک دیا گیا اور پھر ڈک ورتھ پر ویسٹ انڈیز فاتح قرار پایا.پاکستانی ٹیم اس سے قبل پہلا میچ بھی ہار گئی تھی. پروٹیز کا ٹیکا،ورلڈ چیمپئن
خواتین کرکٹ کے لئے پی سی بی کی سرمایہ کاری
خواتین کرکٹ کے لئے پی سی بی کی سرمایہ کاری میں کمی ہے،ملکی لیول پر توجہ نہیں ہے،گراس روٹ لیول پر پلیئرز کی تربیت اور ٹریننگ پر فوکس نہیں ہیں،پلیئرز جب تک پالش نہیں ہونگی تو وہ کیسے متھالی راج تک پہنچ سکیں گی.ملک بھر سے 30 کھلاڑیوں کو جمع کرنا،ایک غیر ملکی کوچ بھرتی کرنا کون سا مشکل کام ہے،پی سی بی اگر خانہ پری کے لئے ہی یہ سب کر رہا ہے تو ذرا ڈھنگ سے کرلے،ورنہ ٹیم کی حیثیت اسی مقام تک ہی رہنی ہے.
ویسے تو پاکستانی کرکٹ شائقین انگلینڈ کے خلاف اپنی سیریز کا انتظار کر رہے ہیں جس کا آغاز 8جولائی سے ہونا ہے،پہلے ایک روزہ میچ کے لئے شائقین کو شدت سے انتظار ہے لیکن آج 4 جولائی کو بھی اہم میچز ہونے ہیں.برسٹل میں انگلینڈ اور سری لنکا تیسرے ایک روزہ میچ کے لئے مدمقابل ہونگے،لنکن ٹیم انگلینڈ میں مسلسل 5 ناکامیوں لکا شکار ہوچکی ہے،ٹی 20سیریز میں وائٹ واش شکست کے بعد اب اس پر ایک روزہ کرکٹ میں بھی ایسی ہی شرمناک شکست کا خوف سوار ہے،اگر ایسا ہوا تو آئی لینڈرز کے اس دورے کا اختتام نہایت ہی تباہ کن ہوگا کیونکہ اسے واپس اپنے ملک جاتے ہی اور سیریز کھیلنی ہے،بھارتی کرکٹ ٹیم ان دنوں میں سری لنکا میں ٹریننگ میں مصروف ہے.
براہ راست فائدہ پاکستان کو
سری لنکا نے اگر آج برسٹل میں انگلینڈ کو ہرادیا تو اس کا براہ راست فائدہ پاکستان کو ہوگا،کیونکہ آج کے میچ کے 3 دن بعد 8جولائی کو انگلش ٹیم پاکستان نے ون ڈے میچ کھیلے گی،شکست کا مطلب انگلش کیمپ میں پینک بٹن کا دبنا ہوگا،میزبان ٹیم اپنی الیون میں تبدیلی کرنے کی کوشش کرے گی،وننگ کمبی نیشن ٹوٹنے سے پاکستان سے شکست کا نفسیاتی خوف بھی سوار ہوگا ،تو سری لنکا جہاں اپنے دورے کا اختتام بہتر کرسکے گا،وہاں جاتے جاتے پاکستان کو بھی فائدہ دے جائے گا،اب تک کی پرفارمنس بہتر نہیں ہے لیکن خوف سےآزاد ہوکر یہ ٹیم وار کرسکتی ہے.
آج کا دوسرا میچ پاکستان خواتین ٹیم کا
آج کا دوسرا میچ پاکستان خواتین ٹیم کا ہے،ویسٹ انڈیز سے 2 آسان میچز ہارنے کے بعد سیریز تو ہاتھ سے چلی گئی ہے لیکن کم سے کم وائٹ واش شکست سے بچنا بھی ضروری ہے،ایسا لگتا ہے کہ پاکستان کی مردوں کی ٹیم کی طرح خواتین پلیئرز بھی ہدف کے تعاقب میں نفسیاتی الجھن کا شکار ہوتی ہیں،اس لئے ٹاس جیتنے کی صورت میں پہلے بیٹنگ ہی کر کے دیکھ لیں .پاکستانی فینز کو گزشتہ میچ کی شکست ہضم نہیں ہوئی ہے کیونکہ معمولی ہدف بھی اگر عبور نہیں کیا جاتا تو پھر کیسی کرکٹ کھیلی جارہی ہے.

Leave A Reply

Your email address will not be published.