پاک بھارت باہمی کرکٹ بحال ،میچز ،مقام اور شیڈول کی ابتدائی تفصیلات بھی کرک سین پر

عمران عثمانی کی خصوصی رپورٹ

انٹرنیشنل کرکٹ،پاکستان اور بھارتی عوام و کرکٹ شائقین کے لئے بڑی خوشخبری،پاک بھارت باہمی سیریز بحال ہونے جارہی ہیں.دونوں ممالک جلد ہی ایکشن میں ہونگے اور اس کے لئے کرک سین حتمی تفصیلات سامنے لانے کااعزاز حاصل کرنے جارہا ہے.کرک سین نے 9فروری 2021 کو یعنی ایک ماہ قبل یہ خبر بریک کی تھی کہ پاکستان اور بھارت کی کرکٹ بحالی ہونے جارہی ہے اور اس کے لئے یہ بھی واضح کیا تھا کہ پہلی سیریز کہاں ہو گی،کون سا ملک کہاں آکر کھیلے گا،آج اس حوالہ سے مزید تفصیلات پیش خدمت ہیں لیکن آگے بڑھنے سے قبل کرک سین کی 9 فروری 2021 کی خبر کا لنک ملاحظہ فرمائیں اور ساتھ ہی یاد رکھیں کہ کرک سین حسب سابق سب سے آگے،سب سے پہلے کے اعزاز کے ساتھ اسی خبر کی طرح اس کی تفصیل بھی سب سے پہلے شیئر کر رہا ہے.

قریب آگئے دیکھتے دیکھتے،مشن پاک بھارت کرکٹ بحالی،پہلی سیریز کا میزبان پاکستان،بگ بریکنگ نیوز

پاکستان اور بھارت کی باہمی کرکٹ سیریز 2007 میں کھیلی گئی تھی،اس کے بعد سے دونوں ممالک میں باہمی سیریز نہیں ہوئیں.ٹیسٹ سیریز تو باالکل بھی نہیں کھیلی گئی البتہ ایک ون ڈے سیریز کے لئے پاکستان نے 9سال قبل بھارت کا دورہ کیا تھا.سوال یہ ہے کہ کشمیر کی موجودہ صورتحال،پاک بھارت حکام کے حالیہ سیاسی معاملات و سیاسی حالات کے تناظر میں کیا یہ ممکن ہے؟ایسے وقت میں کہ جب پاکستان اس سال بھارت میں شیڈول ورلڈ ٹی 20کے لئے آئی سی سی کے ذریعہ بھارت سے سکیورٹی،ویزوں وغیرہ کی تحریری ضمانت مانگ رہا ہے اور بھارت انکاری ہے تو کیا ایسے حالات میں کرکٹ ممکن ہوسکے گی؟

پاکستان اور بھارت کی کرکٹ سیریز کی بحالی آسان امر نہیں ہے لیکن کرک سین اپنی 9فروری 2019کی خبر پر قائم ہے اور ساتھ ہی سیریز کی ممکنہ ونڈو یا شیڈول کےحوالہ سے کچھ مزید تفصیلات شیئر کر رہا ہے.سیاسی معاملات پر کسی بھی قسم کی رائے یا بات کرنے کا یہ پلیٹ فارم نہیں ہے،اس لئے اس سال ہونے والی متعدد اہم مگر خوشگوار تبدیلیوں کا ذکر مناسب نہیں ہوگا.ہماری بحث پاکستان اور بھارت کی باہمی کرکٹ سیریز کی بحالی پر مرکوز ہے.یہ سیریز آئی سی سی ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ ٹو کے لئے بھی بڑا بوسٹ ہوگی.کرک سین ذرائع کے مطابق پاکستان اور بھارت کی سیریز اگلے سال کے شروع یا وسط میں ہوگی اور اس میں 3 ٹیسٹ میچز کے ساتھ ون ڈے اور ٹی 20 میچز بھی شیڈول ہونگے.

سوال یہ ہے کہ یہ سیریز کب ہوگی اور کہاں ہوگی

پاکستان اور بھارت کی یہ سیریز اگلے سال یعنی 2022کے شروع میں ہوگی اور یا اس کے چند ماہ بعد سال کے وسط میں ہوگی اور یہ سیریز پاکستان میں کھیلی جائے گی.بھارتی کرکٹ ٹیم اس سیریز کے لئے پاکستان کا دورہ کرے گی او ر اس کے بعد ہی پاکستانی ٹیم جوابی دورے پر بھارت جائے گی،اس کے لئے ممکنہ ونڈو ز بھی دیکھی گئی ہیں.دونوں ممالک نے اپنے اگلے 2 سالہ کرکٹ پلان کی منظوری دے دی ہے اور دونوں کا سخت ہی شیڈول ہے لیکن اس کے باوجود ایک ونڈو اپریل تک بنتی ہے لیکن اس میں 2 باتیں موجود ہیں.پہلی بات یہ ہےکہ سال کےشروع میں آسٹریلیا نے پاکستان کا دورہ کرنا ہے،پھر پی ایس ایل اور اس کےفوری بعد آئی پی ایل ہے،اس لئے اس ونڈو میں شاید یہ سیریز ممکن نہ ہو.

دوسری ونڈو نہایت ہی اہم ہے اور انتہائی قریبی ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ اسی دوران یہ سیریز ممکن ہوگی.ستمبر 2020 میں ایشیا کپ شیڈول ہے اور پی سی بی چیئرمین احسان مانی گزشتہ دنوں یہ کہہ چکے ہیں کہ 2023 سے قبل ایشیا کپ ممکن نہیں ہے،اس لئے اسی ماہ بھارتی ٹیم کا دورہ متوقع ہےاور اس دوران کچھ میچز کم ہوسکتے ہیں.اس پر بھی غور ہوگا کہ ستمبر کی ونڈو کو پاکستان اور بھارت اپنی دیگر سیریز کے لئے ری شیڈول کے ساتھ استعمال کریں اور اپنی باہمی سیریز اس سے قبل کھیل لیں.

کرک سین آ پ کو یہ خبر دوسری مرتبہ کنفرم کر رہا ہے کہ پاکستان اور بھارت کی باہمی کرکٹ سیریز اگلے سال سے بحال ہونےجارہی ہے اور اس کے لئے فائنل ونڈو،میچز کی تعداد پر بھی کام ہورہا ہے اور یہ بات بھی حتمی ہے کہ بھارتی کرکٹ ٹیم پاکستان کا دورہ کرکے باہمی کرکٹ سیریز کی بحالی کا آغاز کر ےگی .گویا پاکستانی ٹیم پہلے بھارت نہیں جائے گی بلکہ بھارتی ٹیم پہلے پاکستان کا دورہ کرے گی اور سیریز بھی پاکستانی میدانوں میں کھیلی جائے گی.لاہور،راولپنڈی اور کراچی میزبان ہونگے.گوادر کرکٹ اسٹیڈیم میں ایک میچ اس صورت ممکن ہوسکے گا کہ اگر وہاں تمام جدید سہولیات میسر کی جاسکیں.ممکن ہے کہ اس پر کام کا آغاز جلد ہوجائے.ماضی میں بھارتی حکومت کے مسلسل انکار کے باعث باہمی سیریز نہیں ہوسکی تھیں. بھارت نے گزشتہ کرکٹ بحالی کے آغاز پر کھیلی گئی سیریز پاکستان میں جیتی تھی اور 2004 کی یہ اس کی پہلی فتح بھی تھی.