احمد آباد میں آج سے پنک بال ٹیسٹ،بھارت ہارا تو گرینڈ فائنل سے چھٹی،انگلینڈ جیتا تو..؟

عمران عثمانی

ایک لاکھ 10ہزار تماشائیوں کے گنجائش والےتوسیع شدہ اسٹیڈیم میں بدھ سے انگلینڈ اور بھارت سیریز کے تیسرے مگر اہم ترین ٹیسٹ میچ میں مدمقابل ہونگے،اس کے ساتھ ہی احمدآبادا سٹیڈیم میں 55ہزار تماشائیوں کے آنے کی اجازت ہوگی،تمام ٹکٹیں فروخت ہوچکی ہیں،پنک بال ٹیسٹ میچ دوپہر 2بجے شروع ہوگا،4بجے چائے کا وقفہ ہوگااور شام 6بجکر 20منٹ پر کھانے کا وقفہ کیا جائے گا۔
بھارت اور انگلینڈ کے درمیان انتہائی اہم ترین ٹیسٹ میچ بدھ 24فروری سے احمد آباد میں شروع ہورہا ہے،ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ فائنل کی ٹکٹ کے لئے یہاں سے دونوں ٹیموں کے لئے جیت ضروری ہے،انگلینڈ اوربھارت کی سیریز 1-1سے برابر ہے اور انگلینڈ کو اگلے دونوں میچز جیتنے ہونگے اور یہی حال بھارت کا ہے،بھارتی ٹیم اگلے 2میچزمیں سے ایک بھی ہارگئی تو اس کا باب بند ہوجائے گا،چنانچہ انگلینڈ اگر ایک میچ جیت بھی گیا اور ایک ڈرا بھی کھیل دیا تو بھی وہ کوالیفائی نہ کرسکےگا۔دونوں صورتوں میں آسٹریلیا کو ٹکٹ مل جائے گا۔
احمد آباد میں پنک بال ٹیسٹ میچ شیڈول ہے اور بھارت کے لئے پنک بال ٹیسٹ ڈرائونا خواب ہے،آپ کو یاد ہوگا کہ گزشتہ سال کے آخر میں یہی بھارتی ٹیم پنک بال ٹیسٹ میں آسٹریلیا کے خلاف صرف 36 پر ڈھیر ہوگئی تھی،پنک بال میچز میں انگلینڈ کا ریکارڈ بہترہے،اس لئے اسے کوئی فکر نہیں ہے۔موترہ پچ پر ہلکی پھلکی گھا س موجود ہے،اس لئے پیسرز کو بڑی مدد مل سکتی ہے۔انگلش بائولرز میچ کھیلنے کے لئے بے چین ہیں،انگلش ٹیم جیتی تو بھارت سیدھا سیدھا ورلڈ ٹیسٹ چیمئن شپ فائنل ریس سے باہر ہوجائے گا،بھارتی ٹیم جیتی تو انگلینڈ تو باہر فوری ہوجائے گا اور مقابلہ بھارت اور آسٹریلیا میں پڑے گا،اس کے لئے بھارت کو آخری ٹیسٹ میں ایک بار پھر انگلینڈ کو شکست دینی ہوگی۔
بھارتی کرکٹ ٹیم 3پیسرز اور 2اسپنرز سے حملہ آور ہوگی،بمراہ کی واپسی ہوگئی ہے،اس کے مقابلے میں
انگلش ٹیم ایک اسپنر جیل لیچ کے ساتھ سامنے آئے گی،بیٹری میں باقی تمام پیسرز ہونگے۔جونی بیئرسٹو،جمی اینڈرسن اور جوفرا آرچر کی بھی واپسی ہوگئی ہے۔محکمہ موسمیات کے مطابق پانچوں دن دھوپ نکلے گی اور دن میں اچھی خاصی گرمی ہوگی۔بھارتی پیسر ایشانت شرما کیریئر کا 100وں ٹیسٹ کھیلیں گے،وہ کپیل دیو کے 131 میچز کے بعد 100 ٹیسٹ مکمل کرنے والے دوسرے بھارتی فاسٹ بائولر ہونگے۔دوسری جانب بھارتی کپتان روہت شرما کے لئے بڑی پریشانی ہے،وہ 2سال سے سنچری اسکور نہیں کرسکے ہیں۔آخری بار 2019میں بنگلہ دیش کے خلاف کولکتہ کے پنک بال ٹیسٹ میں انہوں نے سنچری بنائی تھی،اب تک34 اننگز ان کی بغیر سنچری کے گزر گئی ہیں۔
یہ تو یاد ہوگا کہ اس سیریز کے ابتدائی 2 ٹیسٹ میچز چنائی میں کھیلے گئے تھے،ان میں پہلا میچ انگلینڈ اور دوسرا میچ بھارت نے جیتا تھا،دونوں میچز میں ون سائیڈڈ گیم ہوئی تھی لیکن پنک بال کی وجہ سے بھارتی کھلاڑی تھوڑا دبائو میں ہیں،تاریخ کے اب تک کھیلے گئے 15 ڈے نائٹ پنک بال ٹیسٹ میچز میں بائولرز کاہی ہمیشہ غلبہ رہا ہے اور پیسرز نے 80فیصد وکٹیں اپنے نام کی ہیں،اسپنرز کو کبھی بھی خاطر خواہ مدد نہیں ملی ہے.آسٹریلیا قریب سے یہ میچ دیکھے گا.