پاکستان دوسرے ٹیسٹ کے تیسرے روز نہ جیت سکا،ایک وکٹ حائل،اضافی وقت بھی مدد نہ کرسکا

رپورٹ : عمران عثمانی

اضافی وقت ملنے کے باوجود پاکستان اور ٹیسٹ فتح کے درمیان ایک وکٹ حائل ہوگئی،ہرارے میں شام کے سائے گہرے ہورہے تھے،اضافی وقت ملنے کے باوجود پاکستانی بائولرز 5اوورز میں آخری وکٹ نہ لے سکے لیکن بہر حال آخری سیشن میں 7وکٹیں لے کر ٹیسٹ فتح اور سیریز کی جیت کے قریب آگئے ہیں.زمبابوے نے دوسرے ٹیسٹ کے تیسرے روز کے خاتمہ پر 9وکٹ کھوکر 220 رنزبنالئے تھے،اسے اننگ کی شکست سے بچنے کے لئے اب بھی 158 رنز درکار ہیں اور پاکستان کو جیت کے لئے صرف ایک وکٹ چاہئے ہے.

پاکستان کرکٹ ٹیم زمبابوے کے خلاف دوسرے ٹیسٹ کے تیسرے روز اختتامی لمحات میں جیت کے قریب آگئی ،اس سے قبل فالوآن کے بعد زمبابوے کے بیٹسمینوں رجس چکابوا اور کپتان برینڈن ٹیلر نے تیسری وکٹ پر 79 اسکور کرکے پاکستان کو اس روز جیت سے دور کرنے کی اچھی کوشش کرلی تھی لیکن پاکستانی بائولرز نے آخری سیشن میں آخری گھنٹے میں یکدم وکٹیں اڑا کر اسی روز میچ ختم کرنے کی امیدیں قائم کرلی تھیں.پھر شاہین آفریدی نے کھیل ختم ہونے سے ایک اوور قبل مسلسل 2 وکٹیں لے کر زمبابوے کی 9وکٹیں گرادیں جس کے باعث 30 منٹ کا اضافی کھیل مل گیا.تیسرے روز کے ہیرو پہلے حسن علی،پھر نعمان علی اور آخر میں شاہین آفریدی رہے.تابش خان دوسری اننگ میں 9اوورز میں 42رنز دے کر کوئی وکٹ نہ لے سکے،پہلی اننگ میں بھی انہوں نے ایک وکٹ لی تھی.زمبابوے کے جنگوے 31 اور موزاربانی صفر کے ساتھ مزاحمت کرتے ہوئے ایک رات کے لئے شکست ٹال گئے.

ہرارے میں میزبان ٹیم جب اپنی پہلی اننگ میں محض 132پر ڈھیر ہوئی تو اسے فالو آن ہوگیا تھا،رجس چکابوا 33 رنز کے ساتھ نمایاں رہے تھے جبکہ حسن علی نے 27رنز دے کر 5وکٹیں لیں.ساجد خان نے 2کھلاڑی آئوٹ کئے.

زمبابوے نے دوسری اننگ شروع کی تو پہلی وکٹ 13کے مجموعی اسکور پر گری جب ماسا کنڈا 8رنزبناکر شاہین اور رضوان کا گٹھ جوڑ بنے.کسوزا اور چکابوا اسکور 63 تک لے گئے،یہاں نعمان علی نے کسوزا کو 22کے انفرادی اسکور پر آئوٹ کردیا،اس کے بعد برینڈن ٹیلر نے پہلی بار قائدانہ اننگ کھیلی اور اسکور کو 142تک لے گئے،79رنزکی خطرناک شراکت کا خاتمہ شاہین نے کیا جب 49رنزبنانے والے ٹیلر کو رضوان کے ہاتھوں کیچ کروادیا،زمبابوے کی تباہی 170کے مجموعہ پر اس وقت شروع ہوئی جب سیٹ بیٹسمین رجس چکابوا نعمان علی کی گیند پر 80رنزبناکر بابر اعظم کے ہاتھوں کیچ ہوگئے.اگلی 3 وکٹیں بھی 9اوورز میں گر گئیں. ملٹن شمبا16 اور ڈونالڈ ٹریپانو کے ساتھ رائے کائیا دونوں صفر پر پویلین لوٹ گئے ،یہ تمام وکٹیں اسپنر نعمان علی نے حاصل کیں.دن ختم ہونے میں صرف 8 گیندیں باقی تھیں کہ شاہین آفریدی نے زمبابوے کی 8ویں وکٹ چیسورو کی 205 پر گری،وہ 8کرسکے.یہی نہیں اگلی ہی بال پر انہوں نےنگاراوا کو بولڈ کردیا،زمبابوے کی 9 وکٹیں گرچکی تھیں.اگلا اوور کروانے نعمان علی آئے لیکن اس کے بعد وقت ملنے کے باوجود پاکستان کا بائولر وکٹ نہ لے سکا.

دوسری اننگ میں شاہین نے 45 رنز دے کر 4 اور نعمان علی نے 86 رنز دے کر 5 وکٹیں لیں .باقی کوئی بائولر وکٹ نہ لے سکا.پاکستان نے پہلا میچ جیت لیا تھا.