ایک روزہ کرکٹ،بھارت پاکستان سے زیادہ ناکام،اہم ریکارڈزکا مکمل احوال

عمران عثمانی
Image By cricketworldcup
ایک روزہ کرکٹ اب ورلڈ کپ سپر لیگ سے مشروط ہوگئی ہے.2019ورلڈ کپ کے بعد اگلے میگا ایونٹ کے لئے ٹیموں کی کوالیفکیشن کا طریقہ کار تبدیل ہے،اس لئے ہر سیریز کے ساتھ ورلڈ کپ سپر لگ جڑے گی.
ایک روزہ کرکٹ کے ریکارڈز ویسے ہی چلیں گے کہ جسے چلتے آرہے ہیں.بھارت کی ٹیم 990ون ڈے میچز کھیل کر پہلے نمبر پر ہے،آسٹریلیا 955اور پاکستان نے 930میچز کھیل رکھے ہیں.دنیا میں یہ 3 ممالک اسی ترتیب کے ساتھ سب سے زیادہ ون ڈے میچز کھیلنے کا اعزاز رکھتے ہیں،فتوحات میں آسٹریلیا 579کے ساتھ پہلے،بھارت 514کے ساتھ دوسرے اور پاکستان488کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے.ناکامیوں میں بھارت پاکستان سے زیادہ بار ہارچکا ہے،بھارت کو426 اور پاکستان کو 413مرتبہ شکست ہوئی ہے،آسٹریلیا صرف 333بار ہاراہے.
ایک روزہ کرکٹ کا بڑا ٹوٹل انگلینڈ نے آسٹریلیا کے خلاف 6وکٹ پر 481رنزکے ساتھ کیا ہے جبکہ مقام ناٹنگھم اور تاریخ19 جون 218 تھی.
ایک روزہ کرکٹ کا کم اسکور زمبابوے کا سری لنکا کے خلاف 25 اپریل 2004کا ہے ،مقام ہرارے تھا اور اسکور تھا صرف 35.امریکا کا نیپال کے خلاف بھی 35 اسکور کم ہے.
شارجہ کرکٹ اسٹیڈیم 240میچزکے ساتھ دنیا میں سب سے زیادہ ایک روزہ میچزکی میزبانی کرنے والا سنٹر ہے.
سچن ٹنڈولکر463میں18426رنزکے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں،49 سنچریز اور 96ففٹیز بھی انکا ریکارڈ ہے.
13نومبر 2014 کو کولکتہ میں سری لنکا کے خلاف بھارت کےروہت شرما نے 264رنزکی جو اننگ کھیلی،وہ اب تک کا بڑی انفرادی اننگ ہے.
سری لنکا کے مرلی دھرن 350ایک روزہ میچز میں 534وکٹ کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں.وسیم اکرم 502وکٹ کے ساتھ دوسری پوزیشن پر ہیں اور کوئی 500کے کلب میں داخل نہیں ہوسکا.سری لنکا کے چمندا واس کے پاس ایک ایسا ریکارڈ ہے جس تک کوئی نہ پہنچ سکا،انہوں نے اننگ میں 8وکٹیں لے رکھی ہیں،کوئی بائولر 7سے زیادہ آئوٹ نہیں کرسکا مگر چمندا واس نے8دسمبر 2001کو کولمبو میں زمبابوےکے خلاف8اوورز میں 19رنز دے کر 8کھلاڑی آئوٹ کئے.

اپنا تبصرہ بھیجیں