سنسنی عروج پر،لاہور کی قلندرانہ فتح،اسلام آباد کا قلعہ سر کرلیا،راشد خان کا جادو

عمران عثمانی کی تجزیہ نما رپورٹ

پاکستان سپر لیگ 6 کا وقفہ کے بعد آغاز،قلندرز نےا سلام آباد کا قلعہ فتح کرلیا،پوائنٹس ٹیبل پر نئی ،اٹھان،8پوائنٹس کے ساتھ پہلی پوزیشن بنالی ہے.ایک مرتبہ کا سابق چیمپئن اسلام آباد ابو ظہبی میں چاروں شانے چت،بیٹنگ فلاپ،فیلڈنگ کمزور اور بائولنگ کے باوجود میچ آخری بال تک گیا،ٹیم بعد میں پڑنے والی اوس،وکٹ کی کنڈیشن کا فائدہ اٹھانے میں ناکام رہی ہے.قلندرز کی فتح میں تجربہ کامرکزی کردار رہا ہے ،راشد خان نے اسپن جادو کے بعد بیٹ سے بھی چمتکار کردیا اور اسلام آباد سے یقنی فتح 5وکٹ سے چھین لی.

ابو ظہبی کے شیخ زید کرکٹ اسٹیڈیم میں یونائیٹڈکے دیئے گئے 144 رنزکے تعاقب میں قلندرز کی اننگ کا آغاز اسلام آباد سے مختلف تھا،انتہائی اطمینان کے ساتھ بیٹنگ شروع کی اور 21 رنزکا آغاز لیا،اس اسکور پر پاکستان کے لئے جنوبی افریقا میں شاندار اننگ کھیلنے والے فخر زمان وکٹ گنواگئے،لیفٹ ہینڈ بیٹسمین9 رنزبناکر فہیم اشرف کے ہاتھوں ایل بی ڈبلیو ہوگئے.44کے مجموعہ پر محمد فیضان کو شاداب خان نے بولڈ کردیا،اتفاق سے وہ بھی 9 تک پہنچ سکے،کپتان سہیل اختر وکٹ پر جمے تھے اور مشکل کنڈیشن مین قلندرز کے خلاف نبرد آزماتھے لیکن 13 ویں اوور میں جب اسکور 82تک پہنچا تو یونائیٹڈ کے لئے فواد عالم نے بڑی کامیابی حاصل کرلی،امپائر نے انہیں ناٹ آئوٹ قرار دیا،ریویو پر وہ آئوٹ قرار پائے.5چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے رائٹ ہینڈ بلے باز نے 30بالز پر قیمتی 40رنزکی اننگ کھیلی لیکن پاکستان کے تجربہ کار کھلاڑی اور گزشتہ سال ٹی 20 انٹر نیشنل کرکٹ کے کلینڈر ایئر میں سب سے زیادہ رنز بناکر ٹاپ کرنے والے حفیظ کی بیٹنگ کا بھی انہیں ساتھ حاصل تھا.

قلندرز کو بڑا جھٹکا حسن علی نے اس وقت دے دیا کہ جب اسکور 97تھا،محمد حفیظ کو آصف علی کے ہاتھوں کیچ کروادیا،25 بالز پر 3چوکوں کی مدد سے 29 رنزبنانے والے حفیظ کا پویلین کی جانب مارچ قلندرز اور اہل لاہور کے لئے بڑا دھکا تھا.آخری 5اوورز مین46 رنز بظاہر مشکل ہوگئے تھے کیونکہ ابو ظہبی کی کینڈیشن بیٹنگ کے لئے سازگار ہر گز نہیں تھیں.گزشتہ سال کے شروع میں دھواں دھار اننگزکھیل کر شہرت پانے والے بین ڈنک سے قلندرز کی امیدیں وابستہ ہوگئی تھیں.آخری 4اوورز میں 40رنز آسان ہر گز نہ تھے.میچ مشکل ہوتا جارہا تھا،اسکور کی کوشش میں الٹی سیدھی شاٹس لگ رہی تھیں.آخری 10بالز پر 22 رنز نہایت ہی مشکل تھے.نتیجہ میں یہ ہوا کہ اسلام آباد کو بین ڈنک کی شکل میں بڑی کامیابی مل گئی،حسن علی نے افتخار کے ہاتھوں انہیں کیچ کروادیا،18بالز پر ڈنک 17کرسکے.122 پر 5 آئوٹ ہوگئے تھے،ہدف مشکل ہوتا جارہا تھا.حسن علی کے تجربہ نے سب کچھ بہادیا تھا لیکن حسن علی کو آخری بال پر پڑنےوالے چھکے نے سنسنی پھیلا دی تھی.ٹم ڈیوڈ کا کلاس چھکا تھا.آخری اوور میں جیت کے لئے16رنز درکار تھے.راشد خان نے حسین طلعت کو 2چوکے لگا کر میچ واپس اپنی طرف کھینچ لیا.ٔپھر راشد خان نے تیسرا چوکا مارا،اب 3بالز پر 3رنز درکار تھے،پھر آخری بال پر ایک رن کی ضرورت تھی.پھر سنگل بن گیا،ٹم ڈیوڈ 23 اور راشد خان 15پر ناٹ آئوٹ گئے،میچ آخری بال پر 144رنزکی تکمیل اور قلندرز کی 5وکٹ کی فتح پر ختم ہوا.راش مین آف دی میچ رہے.حسن علی نے 27 رنز دے کر 2 جبکہ فہیم،فواد اور شاداب نے ایک ایک وکٹ لی.

اس سے قبل قلندرز کے کپتان سہیل اختر نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا جو بظاہر بہتر لگا کیونکہ اسلام آباد ٹیم پوری اننگ میںً مشکلات کا شکار رہی ،آخری اوورز میں فہیم اشرف کی ذمہ دارانہ اننگ کی بدولت ٹیم 9وکٹ پر 143رنزکرنے میں کامیاب ہوگئی فہیم اشرف نے 24 گیندوں پر 27 رنزبنائے جبکہ حسن علی اور حسین طلعت نے 14 اور عثمان خواجہ نے 18 ، کولن منرو 11 اور افتخار احمد 12 رنزبناسکے.قلندرز کی جانب سے جیمز فالکنر 32رنزکے عوض 3 وکٹ لے کر کامیاب ترین بائولر بنے.

پی ایس ایل6کا نیا آغاز،ابو ظہبی میں اسلام آباد کی ملی جلی بیٹنگ،قلندرز کو چکری ہدف دے دیا

اسلام آباد یونائیٹیڈ کی اننگ کی بال بائی بائی اننگ کا احوال اوپر دیئے گئے لنک میں ملاحظہ فرمائیں.

کرک سین نے چکری کا لفظ ایسے ہی نہیں لکھا تھا،حقیقت یہ تھی کہ قلندرزکیا،کسی بھی ٹیم کے لئے یہ مشکل تھا،کرک سین نے 2 روز قبل لکھا تھا کہ دوسری اننگ کی بیٹنگ نہایت ہی مشکل ہوگی،ہدف کا تعاقب مشکل ہوگا اور نہایت تفصیل سے اس کی وجوہ بیان کی تھیں.علم نہیں کہ قلندرز کے کپتان سہیل اختر کو کیا سوجھی کہ انہوں نے پہلے فیلڈنگ کا انتخاب کرلیا.بہر حال مشکلات کے باوجود کامیابی قلندرز کے کھاتے میں آگئی.

اپنا تبصرہ بھیجیں