محمد عباس کی پھر انگلش کائونٹی میں اٹھان،میدان کسی اور کے نام

رپورٹ :عمران عثمانی

پاکستانی کرکٹ ٹیم سے ڈراپ محمد عباس کی 3میچز کی ناکامی کے بعد انگلش کائونٹی میچ میں قدرے بہتر پرفارمنس لیکن ان کے ساتھ موجود دوسرے بائولر کیل ایبٹ کی بے مثال پرفارمنس کی وجہ سے ہمپشائر کا ئونٹی بھی آخر میچ جیتنے میں کامیاب ہوگئی ہے.لندن میں کھیلے گئے میچ میں ہمپشائر نے مڈل سیکس کو تیسرے روز 7وکٹ سے ہرادیا،فاتح ٹیم نے66رنزکا ہدف 3وکٹ پر کھیل ختم ہونے سے چند لمحات قبل مکمل کیا.

مڈل سیکس کائونٹی کو اصل دھچکا دوسری اننگ میں لگا جب عباس اور ایبٹ نے مل کر7وکٹیں 67کے اسکور پر اڑادیں،اس کے بعد ٹیم محض 101 کرسکی.ایبٹ نے41رنز دے کر 5وکٹیں لیں،ان کے مقابلہ میں عباس نے بھی 10 ہی اوورز کئے لیکن صرف 24رنزکے اندر 3کھلاڑی آئوٹ کئے.

جاوید میاں داد کو اچانک عبد القادر کی یاد آگئی،اہم انکشافات

اس سے قبل مڈل سیکس کے ساتھ پہلی اننگ میں بھی ڈرامہ ہوا تھا جب 100کےا سکور پر اسکی 7وکٹیں گر گئی تھیں لیکن ٹیم 172کرنے میں کامیاب ہوئی تھی،اس اننگ میں بھی عباس نے46رنز دے کر 3وکٹیں لیں مگر اصل ہیرو کیل ایبٹ ہی تھے جنہوں نے 44رنز دے کر 6وکٹیں اپنے نام کیں.ہمپشائر ٹیم پہلی اننگ میں 208 رنزبناکر 36رنزکی قیمتی برتری لے گئی تھی،مڈل سیکس کے دوسری اننگ میں 101پر آئوٹ ہونے کے بعد اسے 66 رنزکا ہدف ملا جو اس نے 3وکٹ پر مکمل کرلیا.

اس میچ میں کیل ایبٹ نے مجموعی طور پر85 رنز دے کر 11 کھلاڑی آئوٹ کئے جبکہ محمد عباس نے 6 وکٹوں کے لئےصرف 70 رنز دیئے.عباس پاکستان ٹیسٹ ٹیم سے ڈراپ ہیں،گزشتہ ماہ دوسرے کائونٹی میچ میں انہوں نے 9وکٹیں لی تھیں لیکن اس کے بعد بھجے بھجے رہے،اب 6وکٹ لے کر انہوں نے پھر توجہ حاصل کی ہے،اصل میں انہیں کیل ایبٹ کی طرح 2سے 3میچز درکار ہیں جس میں وہ 10 یا اس سے زائد وکٹیں لیں ،تب ہی وہ پاکستانی ٹیم میں کم بیک کرسکیں گے.پاکستان کے رواں سال انگلینڈ کے دورے میں ٹیسٹ میچز نہیں ہیں،اس لئے پاکستانی ٹیم میں فوری واپسی کے لئے ان کا انگلش وکٹوں پر ایڈجسٹ ہونا بھی ان کو فائدہ نہیں دےگا.