آئی پی ایل یا دورہ پاکستان،سپر اسٹارزکہاں ہونگے،انگلینڈ سے دھماکے دار خبر آگئی

0 42

عمران عثمانی کی رپورٹ
انگلینڈ کے دورہ بنگلہ دیش کے التوا کے بعد یہ چہ مگویاں ہونے لگی تھیں کہ اس سال کا اس کا دورہ پاکستان بھی مشکوک ہوگیا ہے کیونکہ عن اس وقت بھارتی کی آئی پی ایل اپنے عروج سے اختتامی میچزکی جانب گامزن ہوگی لیکن اب ایک بڑی خبر سامنے آئی ہے اور بڑا دعویٰ بھی کہ لیں کہ منظر عام پر آیا ہے اور وہ یہ کہ انگلینڈ کرکٹ ٹیم شیڈول کے مطابق پاکستان کا دورہ کرے گی اور اس کے ٹاپ پلیئرز پاکستان آئیں گے اور انہیں اس کے لئے آئی پی ایل چھوڑنا بھی پڑا تو وہ چھوڑیں گے.
پس منظر
انگلینڈ کرکٹ بورڈ پر اخلاقی دبائو موجود ہے کہ وہ اپنی بہتر سے بہتر ٹیم پاکستان روانہ کرے کیونکہ پاکستان نے گزشتہ سال انگلینڈ کا دورہ ایسے وقت میں کیا تھا کہ جب ہر جانب کورونا کا پہلا اٹیک جاری تھا.اس وقت بھارتی بورڈ نے اپنی خواتین ٹیم انگلینڈ بھیجنے سے انکار کردیا تھا،اپنی نیشنل ٹیم کا دورہ سری لنکا ملتوی کیا تھا،آسٹریلیا نے بنگلہ دیش اور جنوبی افریقا نے اپنے دورے ملتوی کئے تھے.اس وجہ سے پی سی بی کی درخواست پر انگلینڈ نے اپنی ٹیم پاکستان بھیجنے کا فیصلہ کیا تھا.اس تناظر میں اس کے اگر قومی پلیئرز پاکستان نہیں آئیں گے تو اخلاقی طور پر اس پر شدید دبائو پڑے گا اور اسے اس کا جواب دینا مشکل ہوجائے گا.
انگلینڈکے لئے دورہ پاکستان اہم یا آئی پی ایل
بظاہر تو یہی لگتا ہے کہ بھارتی کرکٹ بورڈ کے سامنے تمام کرکٹ بورڈز چھوٹے ہیں ،چنانچہ وہ اپنے پلیئرز کو قومی ذمہ داری سے رخصت دے کرآئی پی ایل کے لئےبھیج دیتے ہیں،جیسا کہ جنوبی افریقا نے اپریل میں سیریزکے دوران اس وقت کیا جب پاکستانی ٹیم تیسرا ایک روزہ میچ کھیلنے کی تیاری کر رہی تھی،پھر اب نیوزی لینڈ نے بھی اعلان کردیا ہے کہ اس کی ٹیم ستمبر،اکتوبر میں اپنے سپر اسٹارز کے بغیر پاکستان آئے گی اور اہم کھلاڑیوں کو آئی پی ایل کی اجازت ہوگی،آسٹریلیا نے بھی یہی پلان کر رکھا ہے تو ایسے میں انگلینڈ باقی بچا تھا،اس نے ستمبر میں شیڈول بنگلہ دیش کا دورہ اسی آئی پی ایل کی وجہ سے سرے سے ہی ملتوی کردیا تاکہ سپر اسٹارز اور غیرسپر اسٹارز کی بحث ہی نہ ہو،اسی طرح اکتوبر میں اس کا دورہ پاکستان طے ہے،پاکستان میں ٹی 20میچز ہونگے.بظاہر انگلینڈ کے حالات بھی یہی لگ رہے تھے لیکن کرک سین تحقیق کے مطابق صورتحال میں ڈرامائی تبدیلی ہوئی ہے.
آئی پی ایل کے میچز کب
آئی پی ایل 2021 کے باقی ماندہ میچز 19ستمبر سے شروع ہونگے اور اس کا فائنل 15 اکتوبر کو کھیلا جائے گا جب کہ ورلڈ ٹی 20 کا پہلا رائونڈ 14 اکتوبر سے ہونا ہےاور دونوں ہی ایونٹس عرب امارات میں شیڈول ہیں،ایسے میں انگلینڈ کی ٹیم اگر بنگلہ دیش کا دورہ کرتی تو اس کے لئےمسائل بڑھ سکتے تھے اوردوسری بات یہ ہے کہ بھارت اور انگلینڈ کا آخری ٹیسٹ 14ستمبر سے شروع ہونا ہے جو زیادہ سے زیادہ 18 ستمبر تک جاسکے گا.
انگلینڈ کے دورہ پاکستان کا وقت
انگلینڈ نے پاکستان میں 2 ٹی 20 میچز کھیلنے ہیں جو 12 اور 14 اکتوبر کو شیڈول ہیں،اب صورتحال یہ ہے کہ آئی پی ایل کے پلے آف 11 اکتوبر سے چل رہے ہوں گے اور 15 اکتوبر کو اس کا فائنل ہوگا،ایسےمیں پاکستان میں انگلینڈ کے2 ٹی 20 انٹر نیشنل میچز ہورہے ہونگے تو سوال یہ ہے کہ انگلینڈ کے قومی کھلاڑی کیا کریں گے،آگے بڑھنے سے قبل انگلینڈاور پی سی بی حکام کے تازہ ترین عوے ملاحظہ فرمائیں جو گزشتہ چند گھنٹوں میں سامنے آئےہیں.
ای سی بی پر عزم،پی سی بی مطمئن’
انگلینڈ کرکٹ بورڈ کے چیف ٹام ہوریسن نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کی ٹیم پاکستان کے سفر کے لئے بے چین ہے اور ہمارا یہ دورہ طے ہے اور ہم نے پاکستان کے اس خیر سگالی جذبہ کا جواب دینا ہے کہ جس میں پاکستان کے کورونا کے دنوں میں انگلینڈ میں سیریز کھیلی تھی،ہماری ٹیم 2005 کے بعد پہلی بار پاکستان جارہی ہے اور ہم انٹر نیشنل کرکٹ بحالی کے لئے پاکستان کی مدد مین شانہ بشانہ رہیں گے،آئی پی ایل بھی درمیان میں ہے،ہم اس کو سیٹ کریں گے.پی سی بی کے ایک ترجمان نے کہا ہے کہا نگلش ٹیم پروگرام کے مطابق پاکستان آئے گی اور ہم ایک سیکنڈ کے لئے بھی مشکوک یا پریشان نہیں ہیں،2 ٹی 20 میچزکے بعد پاکستان اور انگلینڈ کی ٹیمیں ایک ساتھ عرب امارات روانہ ہونگی.
ٹاپ انگلش کھلاڑی پاکستان آئیں گے یا نہیں
کرک سین کی تحقیق اور تبصرے کے مطابق انگلینڈ نے بنگلہ دیش کا دورہ ملتوی ہی اس لئے کیا ہے کہ اس کے تمام ٹاپ 14 پلیئرز آئی پی ایل میں ہونگے،اس لئے وہ 19 ستمبر سے ہی فرنچائزز کو دستیاب ہونگے،اب ظاہر ہے کہ پلے آف میں 4 ٹیموں نے جانا ہے،ان میں سے بھی ایک ٹیم جلد فری ہوجائے گی توپلے آف سے باہر ہونے والی سائیڈز میں شامل انگلینڈ کے تمام ٹاپ پلیئرز کو کہا جائے گا کہ وہ پاکستان میں سفر کریں اور سیریز کھیلیں اور فائنل تک جانے والی آئی پی ایل ٹیموں میں شامل کچھ پلیئرزکو کچھ نہیں کہا جائے گا لیکن جیسا کہ انگلینڈ کے کپتان اوئن مورگن ہیں،ان کی ٹیم جس کنڈیشن میں بھی ہوئی،انہیں عین آخری لمحات میں پاکستان جانے کا کہا جاسکتا ہے،اس طرح یوں کہہ لیں کہ انگلینڈ کے اکثر پلیئرز پاکستان میں سیریز کھیلیں گے اور یہ نیوزی لینڈ کے اس عمل سے یکسر الگ ہوگا کہ اس نے اپنے تمام پلیئرز کو پاکستان کی بجائے آئی پی ایل کی جانب بھیجا ہے.
فائنل نتیجہ
یہ بات طے ہے کہ متعدد انگلش سپر اسٹارز پاکستانی سر زمین پر قدم رکھیں گے،کرک سین کی تحقیق پر یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ انگلینڈ کرکٹ بورڈ نے اس سلسلہ میں اپنے پلیئرز سے ابتدائی بات چیت مکمل کرلی ہے اور اس حوالہ سے آفیشل اعلان اس ماہ کے آخر میں متوقع ہے.گزشتہ دنوں انضمام الحق نے بھی غیر ملکی بورڈز کے ایسے رویوں پر کڑی تنقید کی تھی اور کرک سین نے 2 روز قبل اس حوالہ سے ایک جاندار کالم بھی لکھا تھا.
یہ بھی اسی سے متعلق ہے
ورلڈ ٹی 20 مذاق بن گیا،ڈائریکٹرز وفنکار کون،اگلا ممکنہ نقصان

Leave A Reply

Your email address will not be published.