انضمام کون سی 2 باتوں پر خوش،ایک پر ناخوش،بائولرز کوکونسی ہدایات

عمران عثمانی

Image By Twitter
ُنیوزی لینڈ کے خلاف پاکستانی بیٹسمینوں نے اچھا دن گزار لیا،اب بائولرز کی باری ہے،ظفر گوہر کی شمولیت ٹھیک فیصلہ نہیں،اس سے بہتر یاسر شاہ ہی ہوتے،عباس کو اب ذمہ داری لینی ہوگی۔ان خیالات کا اظہارپاکستان کرکٹ ٹیم کے بارے میں سابق کپتان انضمام الحق نے اپنے یوٹیوب چینل پر کیا ہے۔
نیوزی لینڈ کے خلاف کرائسٹ چرچ میں جاری ٹیسٹ کے پہلے دن کے کھیل پر تبصرہ کرتے ہوئے انضمام کہتے ہیں کہ مجھے2 باتوں کی بڑی خوشی ہوئی،ایک تو اسٹرائیک ریٹ ساڑھے 3 سے اوپر کھیلا۔دوسرا اظہر علی نے آج قدرے تیز بیٹنگ کی،اسٹروکس کھیلے،یہ اچھا پلیئر تھا لیکن علم نہیں کس کے کہنے پر اس نے اسٹاپ کرکٹ کھیلنی شروع کردی،نتیجہ میں ٹی 20 اور ون ڈے ٹیم سے ڈراپ ہوگئے،میں حیرا ن تھا کہ اس نے اپنے آپ کو ایک خول میں بند کردیا،آج انہوں نے بائولرز پر اٹیک کیا،سب نے اٹیکنگ گیم کھیلی۔رضوان کی بھی کیا بات ہے،بہتر سٹرائیک ریٹ کے ساتھ کھیلے،بہت اچھی بیٹنگ کی،مجھے خوشی ہوئی۔
ان ممالک میں رضوان کی اوسط 48 کی جارہی ہے،یہ بڑی بات ہے،بابر کی 49کی اوسط ہے،کامران اکمل کے بعد پہلی بار ایسا وکٹ کیپر بیٹسمین آیا جس نے متاثر کیا ہے۔میں نے کل بھی کہا تھا کہ ٹاپ آرڈر جب تک اسکور نہیں کریں گے تو بات نہیں بنے گی اور اس سے مراد شروع کے 3 بیٹسمین ہیں۔آج اظہر علی نے اسکور کیا لیکن دونوں اوپنرز کو اب بہتر کرنا ہوگا،منیجمنٹ کے پاس اس وقت کوئی چوائس نہیں،ان کو دوسری اننگ میں بہتر کرنا ہوگا۔ٹیسٹ رینکنگ بہتر کرنے کے لئے تسلسل سے اسکور کرنا ہوگا،رضوان کو دیکھ لیں کہ وہ مسلسل اسکور کررہا ہے،فہیم اشرف بھی اسکور کر رہے ہیں،7اننگز کے بعد ایک اچھی اننگ نہیں چاہئے۔
انضمام نے مزید کہا ہے کہ پاکستان نے 297اسکور کر لئے ،اب بائولرز کے لئے بھی اہم بات ہے۔گیند کھنچی ہوئی کریں،لائن و لینتھ سے بال کریں،عباس فہیم کی طرح مت کھیلے کہ میں اسکور روکنے کے لئے ہوں،اسکور روکنا اہم نہیں ہے،یاسر شاہ کو ہی کھلادیتے تو بہتر ہوتا کہ اس کے پاس تجربہ تھا لیکن ظفر گوہر نے بیٹنگ اچھی کی،بائولنگ کے بارے میں ان کے پاس یاسر سے کم تجربہ ہے،میرا مشورہ اور ہدایت یہ ہے کہ تمام بائولرز لائن و لینتھ پر گیند کریں،اس اسکور پر کیویز کو جکڑا جاسکتا ہے۔
انضمام کہتے ہیں کہ جس طرح اظہر علی نے یہ بات سیکھ لی ہےکہ دفاع کے ساتھ اٹیک بھی کرنا ہے اور انہوں نے ایسا کرکے اسکور بنالئے،ایسے ہی نئی گیند کو پکڑنے والے عباس یاد رکھیں کہ ان کی اپروچ صرف اسکور روکنے کی حد تک نہ ہو کیونکہ اس کام کے لئے فہیم اشرف موجود ہیں،آپ وکٹ لینے کے لئے ہیں،اٹیکنگ بائولر ہیں،اپنا پورا کام کریں۔
کرائسٹ چرچ ٹیسٹ کے پہلے روزپاکستانی ٹیم نے 3 اعشاریہ 55کی اوسط سے 297 اسکور کئے ،یہ ایک خوش آئند بات ہے لیکن پاکستانی کیمپ یہ جان لے کہ بلیک کیپس کےپاس تجربہ کار بیٹسمین ہیں،راس ٹیلر اور کین ولیمسن میں سے ایک بھی کھڑا ہوگیا تو یہ پہلے روز کا ایڈوانٹیج ختم ہوجائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں