بھارت کی پاکستان کو آئی پی ایل کھیلنے کی سنسنی خیز پیشکش،آخری لمحات میں کیا ہوا،نئے انکشافات

عمران عثمانی

بھارت کی جانب سے رواں سال پاکستانی کھلاڑیوں کو آئی پی ایل کی دعوت دیئے جانے کا انکشاف ہوا ہے.رواں سال ملتوی ہونے والی آئی پی ایل 2021 کے آغاز سے تھوڑا قبل بھارتی حکام کی جانب سے پاکستانی کرکٹرز کو آئی پی ایل کوکھلانے،دعوت دیئے جانے اور اس حوالہ سے اعلیٰ سطح پر بات چیت کئے جانے کا سنسنی خیز انکشاف ہوا ہے.کرک سین نہایت ذمہ دار ذرائع کے حوالہ سے دعویٰ کر رہا ہے کہ پاکستان کی ایک اعلیٰ ترین شخصیت کے انکار کے بعد پاکستانی پلیئرز اس سال لیگ کے لئے کھیلنے نہیں گئے.آگے بڑھنے سے قبل یہاں تھوڑی دیر رکئے اور کرک سین کی ایک اور خبر یاد کیجئے کہ اس سال فروری میں کرک سین نے سب سے قبل یہ خبر بریک کی تھی کہ پاکستان اور بھارت کی باہمی کرکٹ سیریز بحال،اگلے سال بھارتی کرکٹ ٹیم مکمل سیریز کھیلنے پاکستان آئے گی.

قریب آگئے دیکھتے دیکھتے،مشن پاک بھارت کرکٹ بحالی،پہلی سیریز کا میزبان پاکستان،بگ بریکنگ نیوز

کرک سین خبر کی اشاعت کے 2ماہ بعد قومی میڈیا میں اس حوالہ سے خبریں آئیں اور یہ بھی کہ اس سال دونوں ممالک میں محدود اوورز کی ٹی20 سیریز بھی ہوسکتی ہے لیکن کرک سین کی پہلی اور بنیادی خبر یہ تھی کہ اگلے برس بھارتی ٹیم پاکستان آئے گی،اس حوالہ سے کرک سین نے متعدد خبریں سب سے پہلے بریک کی تھیں اور حال ہی میں یہ بھی انکشاف کیا تھا کہ کئی سطح پر معاملات سیٹ ہوگئے ہیں لیکن حکومتی سطح پر پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کی ایک شرط کی وجہ سے تھوڑی دیر کے لئے تعطل واقع ہوگیا ہے ،اس خبر میں اور بھی بہت کچھ تھا،اس کے لئے یہاں کلک کریں.

پاک بھارت کرکٹ سیریز،عمران خان ہی بڑی رکاوٹ،جلد خوشخبری کا امکان

اب آتے ہیں موجودہ خبر کی جانب،اس سال کے شروع میں جب پاک بھارت حکام میں اعلیٰ سطح کے روابط کہیں بحال تھے اور متعدد امور پر بات ہورہی تھی تو وہاں بھارتی حکام (محکمہ کا نام کسی وجہ سے ظاہر نہیں کیا جارہا)نے پاکستان کے متعلقہ حکام کو یہ پیشکش کی کہ پاکستان اگر چاہے تو اپنے کھلاڑی آئی پی ایل کے لئے بھیج دے،کھلاڑیوں کی فہرست فوری ارسال کرے تاکہ متعلقہ فرنچائزز اپنے اسکواڈ ز کا حصہ بناسکیں.پاکستان کے متعلقہ حکام نے یہاں جب اعلیٰ سطح پر بات کی تو پھر بات وزیر اعظم پاکستان تک پہنچائی گئی،عمران خان نے انکار کرکے معاملہ لپیٹ دیا اور پھر بعد میں وہ شرط ظاہر کی،جس کا اظہار انہوں نے دونوں ممالک کی باہمی ٹریڈ بحالی کی تجویز کے موقع پر کیا تھا اور کاروباری روابط بحال نہیں ہوسکے تھے.

کرکٹ شائقین کے لئے شاید یہ خبر قابل یقین نہ ہو لیکن کرک سین نے فروری کے شروع میں پاک بھارت کرکٹ بحالی کی خبر دیتے وقت لکھا تھا کہ کرک سین اپنی خبر کی صداقت کا یقین دلاتا ہے،بھلے فی الحا ل کہیں سے انکار بھی ہو ،اسی طرح کرک سین اس خبر کی صداقت کی دلیل میں ایڈوانس میں یہ دعویٰ کر رہا ہے کہ اگلے سال پاکستانی کھلاڑی آئی پی ایل کھیلتے دکھائی دیں گے اور بعض بھارتی پلیئرز بھی پی ایس ایل میں شریک ہونگے.دونوں ممالک کی انٹر نیشنل کرکٹ بحالی سے لے کر ہر قسم کی کرکٹ بحالی قریب طے ہے ،بس فائنل وسل کے لئے پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کی ہاں درکار ہے جو بہر حال ہوہی جائے گی.