بھارتی بورڈ کو کتنے ارب کا نقصان،آسٹریلیا کے پلیئرزوکوچز بے گھر،کہاں پناہ لی

آئی پی ایل التوا سے بھارتی کرکٹ بورڈ کو بھاری نقصان کا سامنا کڑا پڑا ہے.بھارتی میڈیا کے مطابق بورڈ کو درمیان میں لیگ چھوڑنے پر 20 ارب بھارتی روپے سے زائد کا نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے،اس کے ساتھ ہی ملک میں کرکٹ انعقاد چیلنج بن گیا ہے اور ورلڈ ٹی 20کے لئے بنائے گئے آئی پی ایل کے ٹیسٹ کیس کا نتیجہ الٹ پڑا ہے.اس طرح بھارت ورلڈ ٹی 20 کی میزبانی سے بھی اب محروم ہونے جارہا ہے.

کورونا،آئی پی ایل 2021 ملتوی ،پی ایس ایل 6 کا انعقاد خطرے میں،بریکنگ نیوز

آئی پی ایل کے التوا کے ساتھ ہی آسٹریلین کرکٹرز و اسٹاف ممبران بے گھر ہوگئے،فوری طور پر تیسرے ملک پناہ لینے پر مجبور ہوگئے ہیں اور 15مئی تک اپنے ملک واپسی کا کوئی امکان نہیں ہے .دوسری جانب انگلینڈ،جنوبی افریقا اور نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ متحرک ہوگئے ہیں کہ وہ جلد از جلد اپنے پلیئرز کو بھارت سے بحفاظت واپس نکالیں اور اس کے لئے اپنی حکومتوں سے رابطے میں ہیں.

آسٹریلیا کی جانب سے بھارتی ودیگرپروازوں پر 15مئی تک پابندی کے باعث اس کے کھلاڑیوں،کوچز و اسپورٹنگ اسٹاف کی بڑی تعداد تیسرے ملک میں پناہ لینے پر مجبور ہوگئی ہے اور اس سلسلہ میں 40 کے قریب پلیئرز و اسٹاف ممبران نے مالدیپ کو اپنا مسکن بنالیا ہے اور وہ وہاں اس وقت تک قیام کریں گے کہ جب تک انہیں اپنے ملک آنے کی اجازت نہیں ملتی اور اس کے لئے 15 مئی تک کی پابندی ہے.

دوسری جانب انگلینڈ کرکٹ بورڈ نے اپنی حکومت سے رابطہ کرکے جلد از جلد پلیئرز نکالنے کی کوششیں شروع کردی ہیں،ان پلیئرز کو انگلینڈ آنے پر 10 روزہ قرنطینہ قید کا سامنا ہوگا،یہی حال نیوزی لینڈ کا ہے ،اس کے پلیئرز بھی براہ راست بھارت سے اڑیں گے اور اپنے ملک اترتے ہی 14 روزہ قرنطینہ گزاریں گے.

منگل کو آئی پی ایل غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کردی گئی تھی جس کے بعد اب غیر ملکی پلیئرز کی واپسی مسئلہ بن گئی ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں