فخرزمان سیریز،بابر میچ کے ہیرو،مصباح کا انوکھا اعزاز،بیٹنگ و بائولنگ میں کون کہاں رہا،مکمل تفصیل

رپورٹ: عمران عثمانی

پاکستان نے جنوبی افریقا کے خلاف 3 ایک روزہ میچزکی سیریز جیت لی،اس نے فیصلہ کن میچ میں سنچورین میں میدان مار لیا.یہاں پاکستان نے پروٹیز کےخلاف اس سیریز سے پہلے جو 6میچز کھیلے تھے،2جیتے اور 4ہارے تھے لیکن اب 8میچز میں حساب برابر کردیا،مقابلہ 4-4 سے برابر ہوگیا.دوسری بات یہ ہے کہ پاکستان نے 2013 کے بعد تاریخ میں دوسری ون ڈے باہمی سیریز جیتی ہے،ان 2سیریز کے علاوہ پاکستان کبھی بھی نہ جیت سکا کیونکہ اس کے علاوہ جتنی بھی باہمی سیریز ہوئی ہیں،وہ 8بنتی ہیں وہ تمام 5میچزکی تھیں ،ان میں جنوبی افریقا ہی فاتح رہا ہے،اس طرح 3میچزکی سیریز پاکستان کو بھاگئی ہے.مصباح بھی پاکستان کے لئے سود مند رہے ہیں،انہوں نے پہلے بطور کپتان کامیابی اپنے نام کی اور اب بطور ہیڈ کوچ پاکستان کے لئے فاتح عالم رہے.

آخری میچ میں مین آف دی میچ بابر اعظم قرار پائے حالانکہ انہوں نے94 اور فخرزمان نے سنچری بنائی تھی لیکن شاید فخر مین آف دی سیریز بھی بننے جارہے تھے،اس لئے انکا انتخاب کردیا گیا.

پاکستان فاتح ،فخر اور نواز ہیرو،گرین کیپس کی روایت برقرار،پروٹیز کی ٹوٹ گئی

یہ سیریز پاکستانی بلےبازوں کے لئے مفید ہی رہی ہے.بابر اعظم 3میچز میں 100 سے زائد کی ایوریج سے 302رنزبناکر دونوں سائیڈز کے ٹاپ اسکورر رہے ،دوسرا نمبر بھی کسی پروٹیز کو نہیں ملا بلکہ پاکستان کے کپتان بابر اعظم کے نام رہا جنہوں نے 76کی اوسط سے 228اسکور کئے.سیریز میں 4سنچریز بنیں،3پاکستان اور ایک جنوبی افریقا کے حصہ میں آئی،اس میں بھی فخرزمان نے 2سنچریز کیں.تیسرے ٹاپ اسکورر ڈیئر ڈوسین رہے جنہوں نے 3میچزکی 2ا ننگز میں 183کی اوسط سے 183اسکور کئے،ایک سنچری بھی تھی.امام الحق 44 کی اوسط سے 132 رنزبناکر چوتھے،باووما 37کی ایوریج سے 113رنزبناکر 5ویں نمبر پر آئے.ڈی کاک اور ڈیوڈ ملر 2،2میچزکھیل کر 100،100 اسکور کرسکے،ان کے علاوہ کوئی بھی بیٹسمین دونوں سائیڈ ز سے 100سے زائداسکور نہیں کرسکا.محمد رضوان کے لئے یہ سیریز خوفناک رہی.3میچزمیں صرف42کرسکے.آصف علی 2میچزمیں 21 اور ڈیبیو کرنے والے دانش عزیز 12ہی اسکور کرسکے.فہیم اشرف کا بیٹ بھی درست انداز میں نہ چل سکا.

بائولنگ کی بات کی جائےاینرچ نوکیا 2میچزمیں 114رنزکے عوض 7وکٹ کے ساتھ پہلے اور حارث رئوف 3میچزمیں 171اسکور کے عوض 7ہی وکٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر آئے.شاہین آفریدی 6وکٹ اپنے نام کرسکے،فلکوایو نے 5وکٹیں لیں .باقی سب اس سے نیچے ہی رہے ہیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں