انگلینڈ ہارگیا،ٹی 20سیریز برابر،کرک سین کا ٹاس اور میچ پر تجزیہ سچ ثابت

رپورٹ:عمران عثمانی

کرک سین کا تجزیہ 200 فیصد درست،ٹاس انگلینڈ،میچ بھارت جیتا،کرک سین نے اپنے میچ تجزیہ میں یہی 2جملے واضح طور پر لکھے تھے،اس کی 2سطریں اور لنک پیش خدمت ہے.

چوتھا ٹی 20،بھارت کا بڑا ریکارڈ خطرے میں،ٹاس کا کیا کردار،شعیب اختر کے پیچھے کون

یہ سیریز ورلڈ ٹی 20 کے حوالہ سے بھی اہمیت کی حامل ہوگی جو ٹیم یہ سیریز جیتے گی وہی ورلڈ چیمپئن کی امیدوار ہوگی.کرک سین کاماننا ہے کہ ٹاس انگلینڈ کے حق اور میچ بھارت کے حق میں ہوسکتاہے.
(کل کے مضمون میں سے چند سطر)

انگلش ٹیم ٹاس کا سکہ حق میں گرنے،پہلے فیلڈنگ کرنے اور کوہلی کو جلد آئوٹ کرنے کے بعد بھارت کے خلاف چوتھے ٹی 20میں یقینی جیت کی خوش فہمی میں ماری گئی،سیریز کو یہاں لاک لگانے کا موقع گنوادیا.بھارت نے احمد آباد میں 5میچز کی سیریز کے اہم ترین معرکہ میں سخت مقابلے کے بعد 8 رنز سے کامیابی حاصل کرکے سیریز2-2سے برابر کردی،اب ٹرافی کا فیصلہ اتوار کے فیصلہ کن معرکہ میں ہوگا.کرک سین نے ٹاس اور میچ کے اسی نتیجہ کی پیش گوئی کی تھی.

انگلش بٰیٹسمینوں نے آخری 5اوورز میں کھیل پر گرفت کھودی اور اپنے ہاتھ میں موجود میچ بھارت کو دے دیا.ڈیوڈ میلان بابر کا تیز ترین ہزار رنزمکمل کرنے کا ریکارڈ نہ توڑسکے لیکن انکے پاس 3اننگز باقی ہیں.آخری اوور میں کرس جارڈن اور جوفرا آرچر نے دھماکے دار ہٹنگ کرکے بھارت کی سٹی گم کردی ،کہاں 6بالز پر 23تھے اور کہاں 3بالز پر 11 اور شردول ٹھاکر بد حواسی میں وائیڈ بالز کئے جارہے تھے،سب کی نبض تیز تھیں.چوتھی گیند پر سنگل بنا اور 5ویں بال پرکرس جارڈن کیچ دے گئے.جوفرا آرچر8 بالز پر 18کے ساتھ ناقابل شکست رہے.بھارت کے 185 رنزکے جواب میں انگلش ٹیم 8وکٹ پر 177 رنز تک محدود رہی ،آخری اوور سے قبل کے 2اوورز میں صرف 16رنز بنے اور یہی بات شکست کی بنیادی وجہ بنی.اس نتیجہ کے ساتھ ہی بعد میں بیٹنگ کرکے جیتنے کی روایت بھی ختم ہوئی.

ڈیوڈ میلان کا متنازعہ کیچ،تھرڈ امپائر بھی آئوٹ دے گئے،بھارتی شائقین اپنوں پر برہم

احمد آباد میں چوتھے ٹی 20میچ کا ٹاس بھی اوئن مورگن کے حق میں گرا.حسب توقع انہوں نے پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا کیونکہ گزشتہ 3میچز میں ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ والی ٹیم جیت رہی تھی.ویرات کوہلی الیون نے اس بات کو سامنے رکھتے ہوئے شروع سے ہی تیز بلے بازی کی تاکہ بڑا مجموعہ سیٹ کیا جاسکے.روہت شرما 12رنزکر سکے جبکہ کے ایل راہول 14کرسکے،انگلینڈ کو بڑی کامیابی ویرات کوہلی کی شکل میں ملی جو صرف ایک کرکے عادل رشید کا نشانہ بنے.70پر 3وکٹ کھونے والی ٹیم سوریا کمار آکسیجن فراہم کر رہے تھے لیکن انہیں 57کے انفرادی اسکور پر متنازعہ کیچ کاسامنا کرنا پڑا.رشاب پانت 30کرنے میںً کامیاب رہے لیکن آخری اوور میں سری یاس آیئر نے18بالز پر 37کی تیز اننگ کھیل کر بھارت کا مجموعہ 8وکٹ پر 185تک لے جانے میں اہم کردار ادا کیا.انگلینڈ کے جوفرا آرچر کامیاب ترین گیند باز رہے جنہوں نے 33 رنز کے عوض 4وکٹیں لیں.

جواب میں انگلینڈ کا آغاز ملا جلا تھا لیکن جب 15ویں اوور میں اس کا اسکور 131تھا اور3کھلاڑی آئوٹ تھے تو اسے32بالز پر صرف55رنز درکار تھے تو ایسا لگتا تھا کہ بھارت آسانی سے ہار جائے گا.جیسن رائے 40،جوس بٹلر9اور ڈیوڈ میلان 14کرکے آئوٹ ہوچکے تھے لیکن 131کے مجموعہ پر65رنزکی چوتھی وکٹ کی شراکت کے ٹوٹتے ہی انگلش بیٹنگ لائن ڈگمگا گئی.جونی بیئرسٹو 25کے انفرادی اسکور پر چاہر کا شکار بنے .9رنزکے اضافہ سے سیٹ بلے باز بین سٹوکس ٹھاکر کا شکار بنے،وہ23بالز پر تیز 46کرکے گئے .اس کے فوری بعد کپتان مورگن 4 اور سام کرن 3کا حصہ ڈال سکے.دونوں نے 2اوورز کے قریب ضائع کئے،انگلینڈ کو آخری 3اوورز میں 39رنز درکار تھے اور پھر آخری اوور میں 23رنزکی ضرورت تھی جو بہت مشکل مشن تھا.

بھارت کی جانب سے ہردک پانڈیا نے 4اوورز میں صرف 16رنز دے کر2،شردول ٹھاکر نے 3 اور راہول چاہر نے 2وکٹیں لیں.