آئی سی سی کے درجن نئے فیصلے،سری لنکن کٹہرے میں ،6اہم خبریں وتبصرے

رپورٹ:عمران عثمانی

ویسٹ انڈیز کرکٹ ٹیم کل جہاں پہلے ٹیسٹ کے آخری روز ایک مشکل چیلنج کا سامنا کررہی تھی اور پھر اس سے کامیاب بھی ہوئی اور میچ ڈرا کرگئی،اس نے دوسرے ٹیسٹ میں سری لنکا کو ہوبہو ویسے ہی امتحان میں ڈال دیا ہے.اب دیکھنے کی بات یہ ہوگی کیا سری لنکن ٹیم ویسٹ انڈیزکی طرح اس کڑے اور بڑے امتحان سے نکلتی ہے یا فیل ہوتی ہے.

سر ویوین رچرڈز اسٹیڈیم میں دوسرے و آخری ٹیسٹ کے 5ویں دن آج جمعہ کو سری لنکا کو جیت کے لئے مزید 348رنز اور ویسٹ انڈیز کو مکمل 10وکٹیں درکار ہیں،مہمان ٹیم 377رنزکے تعاقب میں 29رنزبناکسی نقصان کے آج پھر میدان میں اترےگی.سری لنکا کے لئے جیت شاید ممکن نہ ہو بلکہ ڈرا کرنا ہی کامیابی ہوگی.کھیل کے چوتھے روز میزبان ٹیم نے اپنی دوسری اننگ 280رنز 4وکٹ پر ڈکلیئر کی اور 376کی برتری پر فل اسٹاپ لگادیا.پہلی اننگ میں سنچری بنانے والے کپتان کارلس بریتھویٹ نے دوسری اننگ میں بھی سب سے زیادہ85 رنزبنائے،ان کے علاوہ کیل میئرز نے 55اورجیسن ہولڈر نے ناقابل شکست 71رنزبنائے،سورنگا لکمل اور چمیرا نے 2،2آئوٹ کئے.دن کے آغاز میں سری لنکن ٹیم ویسٹ انڈیزکے 354کے جواب میں258پر آئوٹ ہوگئی تھی،کمار روچ نے 3وکٹیں اپنے نام کی تھیں.

ورلڈ ٹی20،بھارت کا خط ناکافی ،آئی سی سی کاپھر سوال،کرک سین کا تجزیہ سچ ثابت

انگلینڈ کرکٹ بورڈ اور انگلش کھلاڑیوں کے مابین آئی پی ایل 2021کو لے کر میٹھی کھٹی بیان بازی چل رہی ہے.بورڈ نے آئی پی ایل کو ملکی کرکٹ پر ترجیح دینے والے پلیئرز کے لئے تھوڑا سخت زبان استعمال کی تو انگلش کرکٹرز نے ناپسندیدگی ظاہر کی تھی اور اب انگلش کپتان اوئن مورگن نے بھی اپنے بورڈ کو بالواسطہ جواب دیا ہے.مورگن کہتے ہیں کہ ٹی 20 لیگ ٹیسٹ کرکٹ کے لئے کوئی خطرہ نہیں رکھتیں،ساتھ ہی انہوں نے بڑے خوبصورت انداز میں آئی پی ایل کے ساتھ اپنے ملک کے نئے فارمیٹ 100بالز کو بھی ملادیا،کہتے ہیں کہ یہ دونوں ایونٹس کرکٹ کی دنیا کا بہترین شاہکار ہیں.

مورگن کا یہ بیان نہایت ہی معنیٰ خیز ہے کہ اگر آئی پی ایل کھیلنا درست نہیں ہے تو کسی کے لئے 100بالز ایونٹ کیسے مفید ہوگا،انگلینڈ میں اس سال 100بالز کے نام سے نیا ٹورنامنٹ شروع ہورہا ہے.

کوہلی کو شکست،ایل بی ڈبلیو میں وکٹ کا فاصلہ وسیع،آئی سی سی نےکیا تبدیلیاں کیں؟

آئی سی سی نے اپنے بورڈز اجلاس میں جہاں ڈی آر ایس قوانین میں تبدیلی کی ہے،وہاں اس نے کچھ اور فیصلے بھی کئے ہیں.خواتین کرکٹ میں بھی کچھ خوشگوار تبدیلیاں کردی ہیں.خواتین ورلڈ کپ 2022کے شروع ہونے میں اب 12ماہ سے کم کا عرصہ ہے،آئی سی سی نے یہ اعلان کیا ہے کہ خواتین کرکٹ کے تمام ٹائی میچزکے لئے اب سپر اوور لازمی ہوگا،تاکہ فیصلہ کیا جاسکے.تمام خواتین کرکٹ ممالک کی ٹیموں کو ٹیسٹ اور ون ڈے اسٹیٹس دے دیا گیا ہے لیکن اسکا اطلاق فل ممبرز پر ہوگا.اسی طرح خواتین کرکٹ میں پاور پلے اوورز کا قانون بھی بدلا گیا ہے.یہی نہیں بلکہ انڈر 19ویمنز ورلڈ کپ کے منصوبہ کو 2023 تک موخر کردیا گیا ہے.

انٹر نیشنل کرکٹ کونسل نے کورونا کی وجہ سے کرکٹ ایونٹس کو بچانے کا نیا قانون منظور کرلیا ہے جس کا اطلاق فوری طور پر ہوگا.آئی سی سی نے اپنے گلوبل ایونٹس میں اسکواڈ کی تعداد بڑھانے کی منظوری دے دی ہے،اب 22پلیئرز کے ساتھ 8رکنی اسپورٹنگ اسٹاف سفر کرسکےگا،اس سے قبل آئی سی سی ایونٹس کے لئے 15پلیئرز اور 8 اسپورٹنگ اسٹاف کی تعداد مخصوص تھی.اس کا پہلا اطلاق اس سال بھارت میں ہونے والے ورلڈ ٹی 20پر ہوگا.

آئی سی سی بورڈ میٹنگ میں ڈی آر ایس میں 3تبدیلیوں،امپائر کال برقرار رکھنے،پاک بھارت ویزا مسائل،خواتین انڈر 19ورلڈ کپ،ٹائی میچز پر سپر اوور،اسکواڈز کی تعداد میں اضافہ سمیت کوئی درجن کے قریب فیصلے کئے ہیں،فیصلوں کی ابتدائی خبر کے لئے لنک کر کلک کریں.

بنگلہ دیشی کرکٹ ٹیم کے ون ڈے کپتان تمیم اقبال بھی سابق پاکستانی پیسر محمد عامر کے نقش قدم پر چل دیئے ہیں،انہوں نے اعلان کیا ہے کہ وہ مستقبل قریب میں ایک فارمیٹ سے ریٹائرمنٹ لے لیں گے کیونکہ اگر ایسا نہ کیا تو کیریئر جلد ختم ہوجائے گا،حال ہی میں نیوزی لینڈ میں ختم ہونے والی ٹی 20سیریز سے آرام کی غرض سے واپس اپنے ملک آنے والے تمیم کے نزدیک مزید 5سال کرکٹ تب ہی کھیلی جاسکتی ہے کہ وہ ایک فارمیٹ سے جان چھڑوالیں.محمد عامر نے 2019میں یہی سوچ کر ٹیسٹ سے ریٹائرمنٹ لی تھی،نتیجہ میں وہ آج ٹیم سے ڈراپ ہیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں