پی ایس ایل ٹاس میں سرفراز بدقسمت،آئی سی سی کو پچ کی شکایت،کرکٹر دورے سے فرار،اہم اجلاس،5 خبریں

عمران عثمانی
Image:Twitter
پاکستان سپر لیگ میں تمام کپتانوں کے دماغ میں اب یہ بات حتمی طور پر بیٹھ گئی ہے کہ کارکردگی سے زیادہ قسمت کا عمل دخل ہے اور قسمت ساتھ ہوگی تو ٹاس جیتا جائےگا اور ٹاس جیت کر ہی بعد میں بیٹنگ کی جاسکے گی،صورتحال یہ ہے کہ سرفراز احمد واحد کپتان ہیں جو 3 ٹاس ہارے اور میچ بھی ہارے۔8میچز میں اسی ٹیم کو فتح ملی جس نے جس میچ کا ٹاس جیت لیا۔اکثر میچز میں بعد والی ٹیموں نے ناقابل یقین حالات میں ہدف عبو کر کے کامیابی اپنے نام کی ہے۔سوال یہ ہےکہ ٹاس ہارنےاور پہلے بلے بازی کرنے کے باوجودآخر کون سی ٹیم ایسی ہوگی جوبعد میں فیلڈنگ کرکے کامیابی اپنے نام کرسکے،یہ دلچسپ سوال مسلسل جاری رہے گا۔
پی ایس ایل 6روایت قائم،سرفراز زیرو،پشاور نے کوئٹہ کی پاکٹ سے میچ اڑالیا
انگلینڈ کرکٹ بورڈ نے انٹر نیشنل کرکٹ کونسل سے رجوع کا فیصلہ کرلیا ہے،بھارت کے ہاتھوں احمد آباد پنک بال ٹیسٹ میں 2دن سے بھی کم کے وقت میں شکست کے بعد انگلش ٹیم پر شدید تنقید جاری ہے،ٹیم ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ فائنل ریس سے باہر ہوگئی ہے اور یہی نہیں بلکہ اس کے گرائونڈ میں فائنل ہوگا اور نیوزی لینڈ کے ساتھ آسٹریلیا یا بھارت فائنل کھیل رہے ہونگے،ایسے میں انگلینڈ بورڈ نے احمد آباد کی خراب پچ کی شکایت آئی سی سی کو باقاعدہ لگانے کا حتمی فیصلہ کرلیا ہےلیکن اس شکایت کا نتیجہ زیادہ سے زیادہ کچھ بھی ہو،انگلینڈ اس نتیجہ کو تبدیل نہیں کرسکتا،اوپر سے چوتھا ٹیسٹ بھی اسی گرائونڈ کی دوسری پچ پر شیڈول ہے۔
کوئٹہ کارواں پی ایس ایل کا سب سے بڑا 199کاہدف،سرفرازی کاضامن ہوگا؟
دوسری جانب انگلینڈ کو ایک اوردھچکا لگا ہے ،معین علی کے بعد آل رائونڈر کرس واکس نے بھی سیریز کے دوران واپسی کی راہ لے لی ہے،وہ چوتھے میچ کے لئے دستیاب نہیں ہونگے،انگلینڈ کے ساتھ طویل سفر کرنے والے واکس کوجنوبی افریقا،سری لنکا اور بھارت کے دوروںمیں ایک بھی میچ کھیلنےکو نہیں ملا،وہ نہ صرف دلبرداشتہ ہیں بلکہ کھیلنے کے لئے تیار ہی نہیں ہیں،انہوں نے بھارت سے واپس اپنے ملک کی راہ پکڑ لی ہے،اس سے قبل معین علی بھی رخصت ہوچکے ہیں۔
انٹر نیشنل کرکٹ میں کمزور ممالک کے لئے مسائل بدستور کھڑے ہیں،غیر ملکی ویب سائٹ کے مطابق آئی سی سی کا غیر رسمی اجلاس ہوا ہے جس میں ون نکاتی ایجنڈا یہ تھا کہ 2023 سے 2031 تک کے گلوبل ایونٹس کی میزبانی اور ان کی تعداد فائنل کی جائے،آئی سی سی میں بھارت اس بات پر خوش نہیں ہے کہ ایسا ہو،وہ سابقہ روایت چاہتا ہےجبکہ آئی سی سی ہرسال گلوبل ایونٹ کی میزبانی کرکےتمام رکن ممالک کو ریونیو دینا چاہتا ہے،اس سلسلے میں اگلے ماہ کےا جلاس میں اہم بحث متوقع ہے۔
کرک سین کا ماننا ہے کہ بھارت کو آسٹریلیا اور انگلینڈ کی سپورٹ حاصل ہے،یہ آئی سی سی کو ہر سال ایک گلوبل ایونٹ کےانعقاد کی منظوری دینا نہیں چاہتے لیکن آئی سی سی تمام ممالک سے درخواستیں مانگ چکا ہے اور اب حتمی منظوری باقی ہے۔ہر سال گلوبل ایونٹ سے کرکٹ میں بہتری بھی آئے گی اور ساتھ میں پیسہ تمام ممالک میں جائے گا۔ایسا ہونا سب کے مفاد میں ہے۔
یونیورس باس کرس گیل کی 41 سال کی عمر میں ویسٹ انڈیز اسکواڈ میں واپسی ہوگئی ہے،سری لنکا کے خلاف ٹی 20 اور ایک روزہ سیریز کے لئے ویسٹ انڈیز ٹیموں کا اعلان کردیا گیا ہے،پی ایس ایل کے 2میچز کھیل کر واپسی کرنے والے گیل کو 3 مارچ سے 7مارچ کے3 ٹی 20میچز میں شامل کیا گیا ہے۔وہ ایک روزہ اسکواڈ کا حصہ نہیں ہیں۔