بابر اعظم مسلسل دوسرے روز بیرونی سرگرمیوں میں مصروف،ہوٹل سے کئی گھنٹے دور

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم مسلسل دوسرے روز آئوٹ فیلڈ سرگرمیوں میں مصروف پائے گئے ہیں،پہلے اور دوسرے کووڈ ٹیسٹ کے بعد ان کی اس طرح کی سرگرمیاں تھوڑا سوالیہ ہیں کیونکہ قومی کرکٹ ٹیم مکمل طور پر لاہور کے بائیو سیکیور ببل میں چلی گئی ہے.پاکستانی کپتان کا اس طرح آئوٹ فیلڈ سرگرمیوں میں شریک ہونا،ساتھ میں اس کی تشہیر کرنا بذات خود عجیب عمل ہے لیکن اس پر پی سی بی کی خاموشی یہ بتاتی ہے کہ جیسا سب کچھ معمول کے مطابق ہو.

ملک میں اس وقت کورونا کیسز کی شرح بڑھتی جارہی ہے،ٹیم نے جنو بی افریقا کا سخت دورہ کرنا ہے،وہاں بھی بائیو سیکیور ببل اور کووڈ سیریز منتظر ہے،ایسے میں پی سی بی کو دیکھنا چاہئے تھا کہ یہ سب درست ہے؟ایک روز قبل بابر اعظم ایک سرکاری دفتر میں دیکھے گئے اور اگلے روز یعنی جمعرات کو وہ فوٹو شوٹ میں مصروف رہے ہیں،پاکستانی کپتان نے اس کی تصاویر بھی شیئر کی ہیں.

دوسری جانب لاہور سے موصولہ اطلاعات کے مطابق بابر اعظم نےپاکستانی ٹیم کے ساتھ لاہور میں مقررہ وقت پر اپنی آمد کو یقینی نہیں بنایا،وہ بائیو سیکیور ہوٹل میں کئی گھنٹوں کی تاخیر سے پہنچے ہیں اور اس کے بعد انہوں نے وہاں وقت گزارا ہے.پاکستان نے انکی قیادت میں پروٹیز میں دونوں سیریز کھیلنی ہیں،ایسےہی فوٹو شوٹ اور آئوٹ ڈور سرگرمیاں پی ایس ایل 6کے التوا کا بنیادی سبب بنی تھیں جب سب لوگوں نے بائیو سیکیور ببل کو چڑیا گھر بنالیا تھا.جب کپتان ایسی مثال قائم کرے گا تو باقی کرکٹرز کو روکنے والا کون بچے گا،اس لئے بابر اور پی سی بی اگلا ایک ہفتہ ذرا بہتر انداز میں گزارے تاکہ ٹیم جنوبی افریقا میں بخیروخوبی لینڈنگ کرسکے،ٹیم نے 26 مارچ کو اڑان بھرنی ہے.ون ڈے اور ٹی 20میچز کی سیریز اپریل میں کھیلی جائے گی.