پی ایس ایل 2020

پی ایس ایل میں وہ ہوگیا،جو پہلے کبھی نہیں ہواتھا

عمران عثمانی

پاکستان سپر لیگ فائیو میں وہ ہوگیا،جو اس سے قبل کبھی نہیں ہواتھا۔ابھی ایک کوالیفائر میچ باقی ہے،فائنل آنا ہے لیکن ایونٹ کی تاریخ کی 3چیمپئن ٹیمیں ریس سے باہر ہوگئی ہیں اور اب میدان میں وہ گھوڑے باقی بچے ہیں جو کبھی بھی چیمپئن نہیں بن سکے اور اس سے بھی بڑھ کر یہ کہ فائنل میں آنے والی ٹیمیں بھی نئی ہونگی۔پی ایس ایل فائیو میں دفاعی چیمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرزسپر فور میں نہیں پہنچ سکی،2 مرتبہ کی چیمپئن اسلام آباد یونائیٹڈٹیم بھی فائنل 4سے باہر ہوگئی تھی،اب 9ماہ بعد شروع ہونے والے آخری مرحلہ میں واحد چیمپئن ٹیم پشاور زلمی کی بچی تھی لیکن وہ بھی ہفتہ کی شب لاہور قلندرز سے ہارکر باہر ہوگئی۔اس طرح قلندرز اور ملتان سلطانز کے اتوار کےکوالیفائرمیچ کی فاتح ٹیم 17نومبر کے فائنل کا ٹکٹ حاصل کرے گی اور وہ کراچی کنگز سے کھیلے گی،ملتان جیتے یا لاہور ۔فائنل کھیلنے والی ٹیمیں بھی نئی ہونگی اور پی ایس ایل کا چیمپئن بھی نیا ہوگا۔
پروفیسر آن فائر،پشاورزلمی پی ایس ایل سے باہر،لاہورقلندرز فائنل کے قریب
پاکستان سپر لیگ 2016میں شروع ہوئی تھی،پہلے 2ایڈیشن میں 5 ٹیموں اسلام آباد یونائیٹڈ،لاہور قلندرز،پشاور زلمی،کوئٹہ گلیڈی ایٹرز،کراچی کنگز نے شرکت کی جبکہ 2018سے اگلے 2ایڈیشن میں انکے ساتھ چھٹی ٹیم ملتان سلطانز کی بھی شامل ہوگئی ۔اسلام آباد نے2016میں پہلا اور 2018میں تیسرا ایڈیشن جیتا،2017میں چوتھی اور 2019میں تیسری پوزیشن لی۔کراچی کنگز کی قسمت بھی لاہور قلندرز سے ملتی جلتی رہی ہے2016 کے پہلے اور 2019کے آخری ایڈیشن میں چوتھے جبکہ 2017 اور 2018میں تیسرے نمبر پر رہی۔لاہور قلندرز پہلے 2میں 5ویں اور آخری 2میں چھٹے اور آخری نمبر پر رہی ۔ملتان سلطانز کی دونوں مرتبہ 5ویں پوزیشن تھی ،پشاور زلمی 2016میں تیسرے اور 2017میں ونر رہی جبکہ آخری 2 سال سے رنراپ پوزیشن پر ہے اورکوئٹہ گلیڈی ایٹرز پہلے 2ایڈیشن میں رنر اپ ،تیسرے میں چوتھے اور 2019کے آخری ایڈیشن میں چیمپئن رہے۔
کراچی کنگز پہلی بار پی ایس ایل فائنل میں،ملتان کی امید باقی
اس طرح اس بار زلمی کو چوتھی پوزیشن ملی ہے اور اتوار کے کوالیفائر میچ کے بعد لاہور یا ملتان میں سے ایک تیسرے نمبر پر اپنی مہم فنش کرےگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں