ویسٹ انڈیز کے 39 پر 3 آئوٹ،پاکستان کیسے جیت سکتا،فالوآن ممکن ؟

0 48

کرک سین رپورٹ
کیا پاکستان ویسٹ انڈیز کے خلاف ٹیسٹ سیریز بچا پائے گا؟ آسان لفظوں میں جمیکا میں جاری دوسرا ٹیسٹ جیت سکے گا؟بائولرز نے مبہم سی امیدیں روشن کی ہیں.نتیجہ آج میچ کے چوتھے روز واضح ہوسکے گا.سبائنا پارک کنگسٹن جمیکا میں پاکستانی ٹیم نے ویسٹ انڈیزکے 3 صف اول کے کھلاڑی ضرور آئوٹ کردیئے ہیں،میزبان ٹیم کا اسکور صرف 39 ہے.یہ زیادہ خوشی کی بات اس لئے نہیں کہ دونوں ٹیمیں ایک جیسی ہیں.حماقت میں بڑھ کر ہیں.کارکردگی میں ایک دوسرےکی کاپی ہیں.پاکستان نے پہلی اننگ میں 2 پر 3 وکٹ گنوانے کے باوجود 302 اسکور بنائے ہیں.اپنی ایک کمزوری تیسری بار واضح کی ہے.ٹیل اینڈرز میں جان نہیں ہے.
شاہین چالے تو عباس بے بس،یہ ڈرامہ کیا ہے
ادھر ویسٹ انڈین ٹیم اس وقت مڈل آرڈر میں ہے.لوئر آرڈر کے بعد ٹیل اینڈرز نے آنا ہے.پہلے ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں دیوار چین بنے تھے.اس میچ میں بھی بن سکتے ہیں،اس لئے 3 کا آئوٹ ہونا ضمانت نہیں ہے.ویسٹ انڈیز نے چائے کے وقفہ کے تھوڑی دیر بعد جب اپنی اننگ شروع کی تو تیسرا روز ختم ہونے جارہا تھا.29 اوورز کا کھیل باقی تھا.ایک اور عجب بات بھی ہے.سمجھنے کی ہے.پہلے ٹیسٹ میں شروع میں عباس چلے،بعد میں شاہین افریدی.اس میچ میں شروع میں شاہین چلے،عباس بے اثر رہے.سوال یہ ہے کہ پاکستان کو دونوں اینڈز سے موثر اٹیک بیک وقت کیوں نہیں ملتا.اس کا جواب ضروری ہے.
پاکستان نائٹ واچ مین نہ ہٹاسکا
شاہین آفریدی نے پہلی وکٹ 8 اور دوسری 9کے مجموعہ پر اڑادی.دونوں اوپنرز کیرون پاول 4 اور کپتان کریگ بریتھویٹ 5 کرسکے.ابتدائی جھٹکوں کے بعد بونیر اور روسٹن چیز نے سخت اوورز نکال ہی دیئے.عباس کا 6 اوورز کا اسپیل بے اثر گیا.فہیم اشرف آئے تو پاکستان کو تیسری کامیابی ملی.روسٹن چیز10کرکے فہیم کے ہاتھوں بولڈ ہوگئے.ویسٹ انڈیز کا اسکور اس وقت 34 تھا.یہاں پاکستان کو ایک جھٹکا اور دینے کی ضرورت تھی.شام کے سائے گہرے ہورہے تھے.بیٹسمینوں پر دبائو تھا.نائٹ واچ مین الزاری جوزف ڈتے کھڑے تھے.یہ کوئی معمولی بات نہیں تھی.اس سے پاکستانی پیسرز کی کارکردگی جان سکتے ہیں.
فہیم اشرف کے سارے اوورز میڈن،ایک وکٹ لے گئے
ویسٹ انڈیز نے مزید 5 سے 6 اوورز نکال دیئے.امپائرز نے جب کم روشنی کے باعث کھیل ختم کیا تو ویسٹ انڈیز کا اسکور 3 وکٹ پر39 تھا.اس نے 18 اوورز بیٹنگ کی.اس طرح 11 اوورز کا کھیل نہ ہوسکا.الزاری جوزف 16 بالز کھیل کر صفر پر ناٹ آئوٹ گئے.بونیر نے18 ناقابل شکست اسکور بنائے ہیں.پاکستان کی جانب سے شاہین شاہ آفریدی نے 6 اوورز میں 13 رنز دے کر 2 آئوٹ کئے.فہیم اشرف بھی عجب رہے.2 اوورز میڈن ڈالے.کوئی رنز نہیں دیا.ایک وکٹ لی.اسپنر نعمان علی نے ایک اوور کیا اور حسن علی نے 3 اوورز ڈالے.کامیابی نہ لے سکے.
فالو آن جادوئی راستہ،فتح کا بھی ایک امکان
ویسٹ انڈیز کو پاکستان کا پہلی اننگ کا اسکور پورا کرنے کے لئے مزید 263 رنزدرکار ہیں اور 7 وکٹیں باقی ہیں.پاکستان کے پاس فتح کا ممکنہ راستہ یہ ہے کہ وہ چوتھے روز 2 سیشن میں آئوٹ کردے.ایسا ہوا تو اسے لامحالہ 100کے قریب اسکور کی برتری ہوگی،اس سے زائد بھی ہوسکتی.ایسی صورت میں جیتنے کے لئے دوسری اننگ تیز کھیل کر 220سے 250 کا ہدف سیٹ کرنا ہوگا.ویسے تو ایک جادوئی راستہ بھی ہے کہ میزبان ٹیم چوتھی صبح 100 تک ڈھیر ہوجائے اور پاکستان فالو آن کرواکر اسے دوبارہ کھلائے.
دن بھر54 اوورز،صرف 129 اسکور،8 وکٹیں
اس سے قبل پاکستان نے 9 وکٹ پر 302 رنزبناکر اننگ ڈکلیر کی تھی.فواد عالم 124 رنزبناکر ناٹ آئوٹ رہے.دوسرے روز خراب آئوٹ فیلڈ کی وجہ سے مجموعی طور پر 54 اوورز کا کھیل ہوا.129 اسکور بنے اور 8 وکٹیں گریں.یہ ٹیسٹ کرکٹ کی بد ترین تعریف ہے.اس میں پاکستان نے 36 اوورز کھیل کر 5وکٹ پر 90 اسکور بنائے،یہ منفی کھیل کی قابل گرفت مثال ہے.

کہانی تو یہ بھی اسی کی ہے،اتفاق سے پہلا پارٹ ہے

زیادہ وقت،کم اسکور،دفاعی کھیل،فواد کی سنچری،اننگ تاخیر سے ڈکلیئر،نتیجہ کیا

Leave A Reply

Your email address will not be published.