ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ اور پاک بھارت سیریز،نئے آئی سی سی چیئرمین نے بھارت کی زبان بول دی،بریکنگ نیوز

عمران عثمانی

آئی سی سی کے نومنتخب چیئرمین گریگ بارکلے نے اپنی پہلی پریس کانفرنس میں مکمل طور پر بھارت کی زبان بول دی ہے،ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ فائنل کی مخالفت کے ساتھ پاک بھارت کرکٹ روابط وسیریز کے حوالہ سے اپنا دامن چھڑوالیا ہے۔
یاد رہے کہ بھارت 4 ماہ قبل اس کے فائنل کے التوا کی تجویز دے چکا ہے اور پاکستان کے خلاف سیریز اپنی حکومت کے انکار کی وجہ سے نہیں کھیلتا ہے۔
اس طرح کرک سین نے 24 گھنٹے قبل جو خبر بریک کی تھی کہ بھارت آئی پی ایل ٹیموں کی تعداد بڑھا کر کرکٹ کلینڈر میں اپنا اثر رکھنا چاہتا ہے،اس کی بھی غیر رسمی سی تصدیق ہوگئی ہے۔
حمایت یافتہ آئی سی سی چیئرمین آتے ہی بھارت کا نیا وار،آئی پی ایل ٹیمیں بڑھادیں،پاکستان متاثر،بریکنگ نیوز
آئی سی سی کے نئے چیئرمین گریگ بارکلے نے اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ مطلوبہ مقاصد کے حصول میں اب تک ناکام ہے،اس لئے اسے بورڈ ممبرز دوبارہ دیکھیں۔
بارکلے نے پیر کے روز ورچوئل میڈیا کانفرنس میں کہا کہ کووڈ نے چیمپئن شپ سے متعلق چیمپئن شپ کی کمی وکوتاہی واضح کردی ہے۔ڈبلیو ٹی سی کا شیڈول وبائی بیماری سے بڑمتاثر ہوا ، آئی سی سی مجبور ہوا کہ وہ پوائنٹس کو فیصد پر مختص کرے کیونکہ لارڈز میں 2021 کے فائنل سے قبل تمام شیڈول سیریز ختم کرنا ممکن نہیں تھا۔
بارکلے کہتے ہیں کہ ٹیسٹ چیمپئن شپ ٹیسٹ کرکٹ میں دلچسپی واپس لانے کے لئے تیار کی گئی تھی لیکن عملی طور پر مقصد حاصل نہیں ہوا۔میرا ذاتی نظریہ یہ ہے کہ ہمیں کیلنڈر کے تناظر میں اسے دیکھنے کی ضرورت ہے اور کرکٹرز کو ایسی صورتحال میں نہ ڈالنے کی ضرورت ہے جہاں یہ بہت خراب ہوجائے اور ہماری مدد نہ کرے۔
بارکلے نے کہا کہ اس معاملے پر انہیں کچھ مکمل ممبر ممالک کی حمایت حاصل ہے کہ اسے دوبار ہ دیکھا جائے۔ کچھ مکمل ممبرز کے لئے مشکل ہے کیونکہ وہ صرف ٹیسٹ کرکٹ کھیلنا برداشت نہیں کرسکتے ہیں۔
باہمی کرکٹ بنیادی طور پر ممبرز ممالک کے لئے اہم ہے۔میں آئی سی سی مقابلوں کو برقرار رکھنے کاحامی ہوں جو عالمی سطح کے ہیں۔
بھارت اور پاکستان کے مابین کرکٹ معاملات پربارکلے نے ہاتھ کھڑے کردیئے،کہتے ہیں کہ یہ ان کا مینڈیٹ نہیں ہے اور اس میں ملوث نہیں ہوں گا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں