شاہینز سیریز ہارگئے،شعیب اختر کا بورڈ فارغ کرنے کا مطالبہ،راشد لطیف نے ڈریسنگ روم کا نیارازبتادیا

عمران عثمانی
bolojawan
پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان راشد لطیف نے کہا ہے کہ نیوزی لینڈ کے خلاف پاکستان کی کارکردگی مایوس کن ہے ،کھلاڑیوں میں اتنی صلاحیت ہی دکھائی نہیں دی کہ وہ جم کر مقابلہ کرتے لیکن قومی ٹیم نے جب درجن کے قریب کیچ ڈراپ کئے ہیں تو اس کے بعد ہم کیا کین ولیمسن کی ڈبل سنچری کو ڈسکس کریں،ہمارے دور میں کلب کرکٹ فعال تھی،ڈومیسٹک کرکٹ کا بڑا تجربہ ہوتا تھا اب براہ راست کوچنگ سنٹرز یا پھر سیدھی انٹر نیشنل کرکٹ۔پاکستانی ڈریسنگ روم میں اس وقت کیا چل رہا ہوگا؟راشد لطیف کہتے ہیں کہ اب یہ چل رہا ہوگا کہ واپس کیسے اور کتنی جلدی پہنچا جاسکتا ہے،اس پرفارمنس کے بعد اب میچ پر نہیں بلکہ پاکستان واپس آنے پر فوکس ہوگا۔
راولپنڈی ایکسپریس شعیب اختر نے بھی قومی ٹیم پر شدید تنقید کی ہے اور کہا ہے کہ اسکول لیول کی ٹیم کھیلتی دکھائی دی،اس ٹیم پر کیا بات کروں،اس میں کچھ بھی نہیں،یہ کھیلنے نہیں وقت گزارنے گئے تھے۔اب سب کچھ تبدیل کرنے کاوقت ہے۔کرکٹ بورڈ کے 400 ملازمین فارغ کئے جائیں،میں 3 آدمیوں کے ساتھ صبح 7بجے سے کام کرکے 90دن میں سب ٹھیک کردوں گا۔سلسلہ ایسا ہی چلتا رہا تو ٹیم مزید نیچے گرے گی۔پاکستانی گیند بازوں سے بال نہیں پہنچ پارہی،بائولرز اپنا وقت پورا کر رہے ہیں۔شعیب اختر کہتے ہیں کہ کیوی ٹی کا پلیٹ فارم چیک کرلیں کہ کیا کمال ہے،راس ٹیلر نہیں بھی چلے تو 2کھلاڑیوں نے سب سنبھال لیا۔
دوسری جانب کرائسٹ چرچ میں پاکستان کی ٹیسٹ ٹیم اگر ناکامی کے بھنور میں پھنسی ہے تو اسی شہر کے دوسرے مقام پر پاکستان شاہنیز کی ٹیم کو بھی مار پڑگئی،شاہینز میں پاکستان محدود اوورز کرکٹ کے کئی انٹر نیشنل پلیئرز کھیل رہے تھے لیکن اس کے باوجود نیوزی لینڈ اےنے فیصلہ کن ٹی 20 میچ20رنز سے جیت لیااور 5میچزکی سیریز 3-2 سے جیت لی۔نامور ستارے،مستقبل کے لیجنڈری قرار دیئے جانے والے حیدر علی،خوشدل شاہ اور دانش عزیز صفر کی ہزیمت کا نشانہ بن گئے،ان سے کیویز کی دوسرے درجہ کی بائولنگ کو بھی نہیں کھیلا گیا،ان کے علاوہ کپتان روحیل نذیر صرف 8رنزبناسکے
نیوزی لینڈ اے نے پاکستان شاہینز کو20 رنز سےمات دے دی۔اسٹارز سے سجی ٹیم کے لئے182
رنز کا ہدف بھی عذاب بن گیا،ایسا ہوگیا کہ جیسے 282 اسکور کرنے تھے لیکن 182کے تعاقب میں پاکستان شاہین ٹیم 161 رنزبناکر آؤٹ ہوگئی ۔مڈل آرڈر بیٹسمین خوشدل شاہ 70 اور حسین طلعت 44 رنز بنا کرنمایاںر ہے ۔نیوزی لینڈ اے کے جیکب اور آدتیا نے3،3 وکٹیں حاصل کیں ۔
اس سے قبل نیوزی لینڈ اے نے مقررہ 20 اوورز 5 وکٹوں پر 181 رنز بنائے تھے جوئے کارٹر 81 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے ۔پاکستان شاہینز کے محمد حسنین اور دانش عزیز نے2،2وکٹیں حاصل کی تھیں دونوں ٹیموں کے مابین ٹی20 میچ لنکن، کرائسٹ چرچ میں کھیلا گیا۔
پاکستان شاہینز کی ٹیم نے مجموعی طور پر پانچ ٹی20 میچز کھیلے تین میں اسے شکست اور دو میں کامیابی ملی سیریز کا واحد چار روزہ میچ پاکستان شاہینز نے جیتا تھا۔
پاکستان کرکٹ بورڈ نے رواں دورے میں سینئر ٹیم کے ساتھ شاہینز ٹیم بھی بھیجی تھی اور 55رکنی اسکواڈ میں 35پلیئرز شامل تھے.

اپنا تبصرہ بھیجیں