آئی سی سی کا سری لنکن کرکٹ کے وقار اور زوئیسا کی غیرت پر حملہ،نیاانکشاف

عمران عثمانی

سری لنکا کے سابق فاسٹ بائولرنووان زوئیسا انٹرنیشنل کرکٹ کونسل پربرس پڑے،الزام بھی عائد کریا،کہتے ہیں کہ انہیں بتائے بغیر میچ میں بدعنوانی کا مرتکب قرار دیا گیا ہے۔
آئی سی سی اینٹی کرپشن ٹریبونل نے جمعرات کو انہیں 3جرائم کا مرتکب قرار دیا تھا اور سزا کے اعلان تک معطلی کی تلوار لٹکادی ہے۔
وکیل کرشمل وارناسوریہ کے مطابق 42 سالہ زوئیسا جو قومی ٹیم کے سابق بائولنگ کوچ بھی رہ چکے ہیں پر متحدہ عرب امارات میں ہونے والے ٹورنامنٹ میں میچ فکسنگ کے لئے کھلاڑیوں کوبھارتی شہری سے متعارف کرانےکا الزام عائد کیا گیا تھا۔ 2018 میں تحقیقات کا آغاز کیا گیا تھا ۔
سری لنکن کرکٹر فکسنگ کیس میں مجرم قرار
زوئیسانے بتایا کہ انہیں ابھی تک ٹریبونل کے فیصلے سے آگاہ نہیں کیا گیا ۔ انہوں نے کہاکہ میرے لئےیہ ایک صدمہ تھا۔یہ میری غیرت اور میرے پیارے ملک کی ساکھ کو داغدار بنانے کے لئے جان بوجھ کر آئی سی سی کی طرف سے ایک غلط اور سستی چال ہے۔
وکیل نے الزام عائد کیا کہ نے نووان سے انگریزی میں پوچھ گچھ کی گئی جس سے وہ راضی نہیںتھے ، ان کو سنہالہ میں بولنے کی اجازت نہیں دی گئی۔قانونی مشورہ لینے کے بعد ، زوئیسانے دوسرے کھلاڑیوں کو ملوث کرنے سے انکار کردیا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں